13جولائی کو شر پسند عناصر کی گرفتاریوں کے حوالے سے حکمت عملی تیار

لاہور (پبلک نیوز) صوبائی دارالحکومت کی پولیس نے 13جولائی کو ہنگامہ آرائی کرنے والے شر پسند عناصر کی گرفتاریوں کے حوالے سے حکمت عملی تیار کر لی۔ رات گئے سے اب تک 150 کے قریب انتشار پھیلانے والے کارکنان کو دھر لیا۔ جبکہ امن و مان کی صورتحال اور لا اینڈ آرڈر کے حوالے سے 10 ہزار اہلکاروں کی ڈیوٹیاں لگا دی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور پولیس کی جانب سے میاں نواز شریف کے استقبال پر انتشار پھیلانے اور ہنگامہ آرائی کرنے  والوں کے خلاف مختلف علاقوں میں ن لیگ کے کارکنان کی گرفتاریوں کے حوالے سے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ متعدد کارکن گرفتاریوں سے بچنے کے لیے گھروں سے غائب ہیں۔ گزشتہ شب کو رات گئے تک بھی تھانوں کے اندر اور باہر کارکنوں کا احتجاج جاری رہا۔

ایس ایس آپریشنز اسد سرفراز کے مطابق ڈیڑھ سو کے قریب کارکنوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ 13جولائی کو کارکنان کو قانون ہاتھ میں نہیں لینے دیا جائے گا۔ تمام پوائنٹوں پر پولیس کی نفری بھی تعینات ہے۔ تاکہ دہشت گردی کے عزائم کو ناکام بنایا جائے۔ جاتی عمرہ، ایئرپورٹ، ملتان روڈ، گڑھی شاہو، شاہدرہ، ڈیفنس اور سٹی کے علاقوں میں بھی چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔

واضح رہے کہ اس حوالے سے دس ہزار کے قریب پولیس اہلکار جبکہ ٹریفک کو روں دواں رکھنے کے لیے سات سو کے قریب ٹریفک وارڈنز تعینات کئے گئے ہیں جبکہ چیف ٹریفک پولیس کی جانب سے ٹریفک پلان بھی جاری کر دیا گیا ہے۔

1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں