ملتان: سرکاری سکول میں دسویں جماعت کے طالبعلم پر پرنسپل آفس میں 3اساتذہ کا بدترین تشدد

ملتان (پبلک نیوز) گورنمنٹ ایم اے جناح سکول کے اساتذہ کا طالبعلم پر بد ترین تشدد، پارٹی فنڈ 500 روپے نہ دینے پر احمر کو ڈنڈوں، لاتوں، گھونسوں اور مکوں سے تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ ایم اے جناح سکول کے اساتذہ کی جانب سے طالبعلم پر بد ترین تشدد کیا گیا۔ ہم جماعت زبیر کا کہنا ہے کہ دسویں جماعت کے طالبعلم محمد احمر کو پرنسپل آفس میں تین اساتزہ نے تشدد کا نشانہ بنایا۔ والد کا کہنا ہے کہ پارٹی فنڈ 500 روپے نہ دینے پر احمر کو ڈنڈوں، لاتوں، گھونسوں اور مکوں سے تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ تشدد کے بعد احمر کو باندھ کر بے ہوشی کی حالت میں جھاڑیوں میں پھنک دیا گیا۔ بچے کو لینے کے لیے سکول گئے تو اندد نہ جانے دیا گیا۔

تشدد کا نشانہ بننے والے بچے کی والد کا کہنا ہے کہ احمر کو باندھ کر جھاڑیوں میں پھینکا گیا تھا۔ ہوش میں آنے پر احمر چیختا رہا کہ استاد مجھے جان سے مار دیں گے۔ اساتذہ کے بہیمانہ تشدد سے احمر دماغی طور پر سہما ہوا ہے۔ استاد نما حیوانوں کو سخت سزا دی جائے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں