پاکستان فلم انڈسٹری کے پہلے رومانوی ہیرو سنتوش کمار کی 37ویں برسی

لاہور (پبلک نیوز) فلم انڈسٹری کے تاریخ ساز ہیرو سنتوش کمار کی 37 ویں برسی آج منائی جا رہی ہے۔ ملائم اور دھیمے لہجے میں جذبوں کا حقیقت کے قریب تر اظہار کرنے والے موسٰی رضا المعروف سنتوش کمار اپنے فن سے مالا مال خاندان کے سربراہ تھے۔

 

فلم انڈسٹری کے نامور اداکار سنتوش کمار کے مداح ان کی آج 37 ویں برسی  منا رہے ہیں۔ سنتوش کمار پچیس دسمبر انیس سو پچیس کو لاہور میں پیدا ہوئے، انہوں نے اپنے فنی کیریئر کا آغاز فلم 'آہستہ' سے کیا۔

 

سنتوش کمار نے اپنے دور کی مقبول اداکارہ صبیحہ خانم کے ساتھ 50 کے قریب فلموں میں کام کیا اور پھر صبیحہ خانم کو ہی اپنا شریک حیات بنایا، سنتوش کمار کو فلم 'وعدہ' میں باکمال اداکاری پر پہلے نگار ایوارڈ سے بھی نوازا گیا، ان کی کامیاب فلموں میں موسیقار، گھونگھٹ، رشتہ، دامن، حویلی اور فیشن شامل ہیں۔

 

انیس سو پچاس میں پنجابی فلم ببلی میں جلوہ گر ہوئے اور اسی سال پاکستان کی پہلی اردو سلور جوبلی فلم 'دو آنسو' میں بطور ہیرو تاریخ ساز کردار ادا کیا، اپنی طرز کا یہ منفرد فنکار 11 جون 1982 کو دنیا سے رخصت ہو گیا لیکن ان کا فن فلم انڈسٹری اور مداحوں کے دلوں میں آج بھی زندہ ہے۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں