'کوئی بھی قانون سے بالاتر کام کرے گا تو قانون حرکت میں آئے گا'

اسلام آباد (پبلک نیوز) مشیر وزیر اعظم برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے مکہ سمٹ میں مسلم امہ کا مقدمہ لڑا۔ 70 سال کے گلےسڑے نظام سے نجات دلانے آئے ہیں۔ وزیراعظم اسلام کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے لا رہے ہیں۔

 

آج وزیراعظم کی زیرصدارت44واں اجلاس ہوا۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مشیر وزیر اعظم برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ  کابینہ نے وزیراعظم پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا۔ کابینہ نے وزیراعظم کو شاندار خطاب پر خراج تحسین پیش کیا۔ وزیراعظم نے مکہ سمٹ میں مسلم امہ کا مقدمہ لڑا۔ 70 سال کے گلےسڑے نظام سے نجات دلانے آئے ہیں۔ وزیراعظم اسلام کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے لا رہے ہیں۔

 

ان کا کہنا تھا کہ یکساں انصاف کی فراہمی کا مینڈیٹ لے کر آئے ہیں۔ جو کچھ ہو رہا ہے وزیراعظم آنکھیں بند نہیں کر سکتے۔ کابینہ کو سپریم جوڈیشل کونسل میں ریفرنس بارے آگاہ کیا گیا۔ طرز حکمرانی اور عوامی مفاد کو ساتھ لے کر چل رہے ہیں۔ 2 معزز ججز کے خلاف شکایات آئی تھیں۔ شکایات سپریم جوڈیشل کونسل کو بجھوا دی گئیں۔ ریکوری یونٹ نے تصدیق کے بعد شکایات بھجوائیں۔ سپریم جوڈیشل کونسل ایک نیوٹرل فورم ہے۔

 

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ عدلیہ کی شکایات کوعدلیہ ہی دیکھے گی۔ پاکستان کا ہر شہری قانون کے تابع ہے۔ کوئی بھی قانون سے بالاتر کام کرے گا تو قانون حرکت میں آئے گا۔ ہم قانون کی بالادستی کی بات کرتے ہیں۔ ہم نے آئینی حدود سے باہر کوئی فیصلہ نہیں کیا۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں