آج عظیم مثال قائم کرنے والے اعتزاز حسن شہید کی 5ویں برسی منائی جا رہی ہے

ہنگو(پبلک نیوز) وطن عزیز پر اپنی جان قربان کرکے مادر علمی اور سیکڑوں طالب علموں کی زندگیاں بچانے والے اور بہادری کی شاندار مثال قائم کرنے والے اعتزاز حسن کی آج پانچویں برسی منائی جارہی ہے۔ اعتزاز حسن کو 6 ستمبر 2015 کو تمغہ شجاعت سے نوازا گیا۔

 

 

آج 6 جنوری 2019 کو شہید اعتزاز حسن کی 5 ویں برسی منائی جا رہی ہے، شجاعت و قربانی کی عظیم مثال قائم کرنے والے 16 سالہ اعتزاز حسن نے آج سے 5برس قبل اپنی قیمتی جان کا نذرانہ پیش کرکے سیکڑوں زندگیاں اور مادر درس گاہ (اسکول) کا تقدس بچاکر تعلیم دشمن دہشت گردوں کو پیغام دیا کہ وہ قوم کے بچوں سے لڑنے کی صلاحیت نہیں رکھتے۔

 

6 جنوری 2014 کو ضلع ہنگو میں اعتزاز حسن نے ایک خودکش حملہ آور کو اس وقت دبوچ لیا۔ جب وہ ہنگو میں واقع ابراہیم زئی اسکول پر حملہ کرنے جارہا تھا جہاں اسوقت دو ہزار کے لگ بھگ طالب علم اسمبلی کے لئے جمع تھے، اعتزاز حسن اپنے دوستوں کے ساتھ اسکول جا رہا تھا کہ اسے ایک اجنبی شخص ناپاک عزائم کے ساتھ اسکول کی جانب بڑھتا نظر آیا۔

 

اعتزاز حسن نے دہشت گرد کے ناپاک عزائم کو بھاپنتے ہوئے اسے پوری قوت سے جکڑ لیا، یہاں تک کہ خودکش جیکٹ دھماکے سے پھٹ گئی اور اعتزاز حسن علم دوستی کا ثبوت دیتے ہوئے جام شہادت نوش کر گیا، اس شجاعت اور جرات مندانہ اقدام کے باعث 6 ستمبر 2015 کواعتزاز حسن کو تمغہ شجاعت سے نوازا گیا۔

عطاء سبحانی  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں