صحرا کی بلبل کو بچھڑے 5 برس بیت گئے

پبلک نیوز: صحرا کی بلبل کو بچھڑے 5 برس بیت گئے۔ گلوکارہ ریشماں کی آواز کا سحر آج بھی برقرار ہے۔

لازوال گیت گانے والی صحرا کی بلبل گلوکارہ ریشماں کو دنیا سے بچھڑے ہوئے 5 سال گزر چکے ہیں۔ گلوکارہ ریشماں کا انتقال 3 نومبر 2013 کو گلے کے کینسر میں مبتلا ہونے کے باعث ہوا تھا۔

آپ 1947 میں ہندوستان کی ریاست راجستھان میں پیدا ہوئی۔ بلبل صحرا کہلانے والی ریشماں نے کئی عشروں تک لوک موسیقی میں اپنے سروں کا جادو جگایا۔

12 سال کی عمر میں گلوکاری کا آغاز کرنے والی بلبل صحرا نے 60 کی دہائی میں پاکستان ٹیلی وژن سے اپنے فنی سفر کا آغاز کیا۔ آپ نے پاکستانی فلموں کے علاوہ بولی وڈ میں بھی اپنی آواز کا جادو چلایا۔

ریشماں نے  نہ صرف اردو بلکہ پشتو، راجستھانی اور سندھی زبانوں میں بھی گیت گائے۔ ان کے مشہور گانون میں لمبی جُدائی، دمام دم مست قلندر، انکھیاں نوں رہنے دے انکھیاں دے کول کول نے لوگوں کو اپنے سحر میں مبتلا کیا۔

حکومت پاکستان نے ریشماں کو اُن کی لازوال خدمات پر صدارتی ایوارڈ برائے حسن کارکردگی، لیجنٹس آف پاکستان اور ستارہ امتیاز سے بھی نوازا۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں