لاہور: شادی کی تقریب میں پولس کی مبینہ فائرنگ،6 افراد زخمی

لاہور(حسنین چوہدری) مغل پورہ میں شادی کی تقریب ماتم میں بدل گئی، مہندی کی رسم میں پولیس کی جانب سے مبینہ فائرنگ کر کے 6 افراد کو زخمی کر دیا گیا۔ ورثاء نے سروسز ہسپتال کے سامنے سڑک کو بلاک کرتے ہوئے پولیس کے خلاف شدید احتجاج کیا۔ 

 

لاہور کےعلاقے تھانہ مغل پورہ میں ہاتھوں پر مہندی کا رنگ تو چڑھ نہ سکا، پولیس کی مبینہ فائرنگ سے خون کا رنگ چڑھ گیا، جس سے ایک ہی خاندان کے چھ افراد زخمی ہو گئے، جنہیں طبی امداد کیلئے سروسز ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ورثاء نے سروسز ہسپتال کے سامنے سڑک کو بلاک کرتے ہوئے پولیس کے خلاف شدید احتجاج کیا۔ لواحقین کا کہنا تھا کہ پولیس اہلکار مہندی کی تقریب رکوانا چاہتے تھے۔

 

مظاہرین کے پولیس کے ساتھ مذاکرات معاملے کو حل نہ کر سکیں۔ ڈی ایس پی انارکلی ظفرعباسن نقوی نے کہا کہ واقعہ افسوسناک ہے۔ مہندی کی رسم کے دوران فائرنگ کی گئی۔ فائرنگ کرنے والا پولیس اہلکار عرفان بتایا جا رہا ہے۔ ایف آئی آر درج ہونے کے بعد مزید تحقیقات ہوں گی۔ صوبائی درالحکومت لاہور میں پولیس گر دی کے مبینہ واقعات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ کیا بار بار تبدیل ہونے والے آئی جی پنجاب پولیس اصلاحات کر پائیں گے؟ یہ ایک بڑا سوالیہ نشان ہے۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں