سعودی عرب میں مذہب کے نام پر 6 سالہ معصوم زکریہ ال جابر قتل

پبلک نیوز: سعودی عرب میں مذہب کے نام پر 6 سالہ معصوم زکریہ ال جابر کو قتل کر دیا گیا۔ معصوم بچی اپنی والدہ کے ساتھ مدینہ منورہ روضہ رسولؐ کی زیارت کرنے جا رہی تھی۔ دلخراش واقعے پر انٹرنیشنل میڈیا بھی بلبلا اُٹھا۔

 

سعودی عرب میں فرقہ وارانہ فساد کی لرزہ خیز واردات سامنےآ گئی۔ روضہ رسولؐ کی زیارت  کے لیے آئے ننھے پھول کو بے دردی سے مسل دیا گیا۔

 

برطانوی میڈیا کے مطابق 6 سالہ زکریہ والدہ کے ہمراہ روضہ رسول جانے کے لیے محوِ سفر تھے کہ ڈرائیور نے ال طلال قصبہ کے قریب اچانک ٹیکسی روکی۔ سفاک قاتل نے والدہ کے سامنے ننھے پھول کو گاڑی سے اتارا اور شیشے کے ٹکڑے سے اس کے لخت جگر کا سر قلم کر دیا۔

 

ماں کی مزاحمت کچھ کام آئی نہ ہی چیخ و پکار۔ الزام لگایا گیا ہے کہ پولیس اہلکار دیکھتے رہے لیکن مدد کے لیے آگے نہ بڑھے۔ عینی  شاہدین میں سے کچھ لوگوں نے بچے کو بچانے کی کوشش کی لیکن تب تک بہت دیر ہو چکی تھی۔

 

مذہب کی بنیاد پر ننھے پھول کے دلخراش قتل نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں