مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری پابندیوں کا 74 واں روز، لاکھوں کشمیری گھروں میں محصور

پبلک نیوز: مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری پابندیوں کا آج 74 واں روز ہے۔ لاکھوں کشمیری گھروں میں محصور ہیں، مسلسل کرفیو کے باعث وادی میں انسانی بحران جنم لینے لگا ہے۔ اقوامِ متحدہ جنرل اسمبلی میں پاکستانی مندوب ملیحہ لودھی نے کہا بھارتی جارحانہ اقدام خطے کے امن و سلامتی کے لیے بڑا خطرہ ہیں، بھارت کی پالیسیاں انتہا پسند رویہ کی عکاس ہیں۔

 

مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 74 ویں روز بھی مواصلاتی نظام مفلوج اور لاک ڈاؤن برقرار ہے۔ کشمیری اپنے گھروں میں قیدیوں کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔ کھانے پینے کی اشیاء اور ادویات کی شدید قلت کے باعث انسانی المیہ جنم لینے لگا۔ بھارتی ریاستی دہشت گردی پر وادی کے لوگوں میں شدید غم اور غصہ لاوے کی طرح اُبل رہا ہے۔

 

گزشتہ روز بھارتی فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کی آڑ میں فائرنگ کر کے تین نوجوانوں کو شہید کر دیا تھا۔ اننت ناگ اور کلگام میں خواتین اور بچوں سمیت ہزاروں کشمیریوں نے کرفیو توڑتے ہوئے شہیدوں کی نمازِ جنازہ میں شرکت کی۔ کشمیریوں نے سبز ہلالی پرچم لہراتے ہوئے آزادی کے حق میں فلک شگاف نعرے بھی لگائے۔

 

ادھر اقوامِ متحدہ جنرل اسمبلی میں پاکستانی مندوب ملحیہ لودھی نے بھارتی عسکریت پسندی کا پردہ چاک کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارتی جارحانہ اقدام خطے کے امن و سلامتی کے لیے بڑا خطرہ ہیں۔ پلوامہ کے بعد پاکستان پر بلا اشتعال حملہ بھارتی عزائم کا ثبوت ہے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں