یوم یکجہتی کشمیر پر صدر مملکت پاکستان عارف علوی کے بھارت سے 8مطالبات

مظفر آباد (پبلک نیوز) صدر مملکت پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام اور حکومت کشمیری عوام سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں۔ کشمیر پر صرف کشمیریوں کا حق ہے۔ کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ صرف کشمیریوں نے کرنا ہے۔

آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی بلا تفریق حمایت کرتے ہیں۔  قربانیاں دینے والی ماؤں، بیٹیوں اور نوجوانوں کو سلام پیش کرتا ہوں۔ کسی قوم کے جذبات اور احساس کو زیادہ دیر تک دبایا نہیں جا سکتا۔

صدر مملکت نے کہا کہ کشمیری کے جذبہ آزادی کو طاقت سے نہیں دبایا جا سکتا۔ باؤنڈری کمیشن نے سوچے سمجھے منصوبے کے تحت سازش کی۔ گورداس پور سمیت مسلم اکثریتی اضلاع پاکستان کو مل جاتے تو مسئلہ کشمیر نہ ہوتا۔ وحشیانہ ظلم اور عصمت دری کے شرمناک واقعات تاریخ پر بد نما داغ ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان ہر اعتبار سے کشمیری عوام کی حمایت کرتا رہاہے۔ بھارت ہر مقام پر کشمیریوں کی جدوجہد کو دباتا رہا۔ بھارت جھوٹے دعوؤں پر کشمیر پر قابض رہا ہے۔ آزادی کی پر امن جدوجہد کو بھارت نے خونی رنگ دیا۔ پر امن جدوجہد کو ہتھیاروں سے دبایا جا رہا ہے۔

ڈاکٹر عارف علوی کا یہ بھی کہنا تھا کہ دنیا کو بتانا ہو گا کہ مقبوضہ کشمیر میں کتنا ظلم ہو رہا ہے۔ دنیا کو سوشل میڈیا سے پیغام دینا ہو گا کہ کشمیر کی آزادی ضروری ہے۔ کشمیر میں ہونیوالے ظلم کی ایک ایک تصویر دنیا کے سامنے لانا ہو گی۔ خود ساختہ مقابلے بنا کر بھارتی فوج نہتے کشمیریوں کا قتل عام کر رہی ہے۔

اپنے میں انھوں نے واضح کیا کہ کشمیری بزرگ، مائیں، بہنیں، بچے سر عام قتل ہو رہے ہیں۔ کشمیر کی آزادی کے لیے پاکستان میں ہر زبان متفق اور متحد ہے۔ کشمیر کے حوالے سے پاکستانی سیاستدانوں میں کوئی اختلاف نہیں۔ پاکستان میں کبھی بھی کشمیر کے معاملے پر سیاست نہیں کی گئی۔

مزید ان کا کہنا تھا کہ نسلوں سے جاری رہنے والی جدوجہد کے لیے مضبوط موقف اپنانا ہو گا۔ بھارت مذاکرات سے ہمیشہ بھاگ جاتا ہے کیونکہ اسکے پاس دلائل نہیں۔ بھارت اپنا سفاک چہرہ چھپانے کیلئے مذاکرات کی میز پر نہیں آتا۔ وزیراعظم نے بھارت کی جانب دوستی کا ہاتھ بڑھایا۔

بھارت سے مذاکرات کی کوششیں ناکام ہونے کی وجہ بتاتے ہوئے انھوں نے کہا کہ بھارت نے مثبت جواب نہ دے کر قابل افسوس حرکت کی۔ برہان وانی جیسے لاکھوں کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جانے دیں گے۔  اقوام متحدہ، جموں کشمیر میں فیکٹ فائنڈنگ کمیشن بھیجے۔ جواہر لال نہرو سےلیکر مودی تک ہر بھارتی نے سازش کی۔

صدر ڈاکٹر عارف علوی کے بھارت سے کشمیریوں کے لیے 8مطالبات

بھارت تمام سیاسی قیدیوں کو آزاد کرے۔

مقبوضہ کشمیر میں آزادی اظہار رائے دی جائے۔

مقبوضہ وادی میں آتشیں اسلحہ کا استعمال فوری بند کیا جائے۔

نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گن کا وحشیانہ استعمال بند کیا جائے۔

بھارت مقبوضہ وادی میں کالے قوانین فوری ختم کرے۔

حریت قیادت کو بیرون ملک سفر کی اجازت دی جائے۔

بھارت انسانی حقوق کے عالمی مبصرین کے لیے کشمیر کے راستے کھولے۔

بھارت عالمی اور سوشل میڈیا کے لیے کشمیر پر سے پابندیاں ختم کرے۔

احمد علی کیف  6 ماه پہلے

متعلقہ خبریں