کراچی:غلط انجکشن لگنے سے مفلوج ہونے والی9ماہ کی بچی نشوا انتقال کر گئی

کراچی(پبلک نیوز) ہنستی مسکراتی، چڑیوں جیسی چہچہاتی نشوا والدین کو روتا چھوڑ گئی، کراچی کے دارلصحت میں غلط انجکشن لگنے سے دماغی طور پر مفلوج ہونے والی بچی انتقال کر گئی، میت گھر پہنچے پر کہرام مچ گیا، اہل خانہ غم سے نڈھال، ہر آنکھ اشکبار ہے۔

 

کراچی میں غلط انجیکشن لگنے کی وجہ سے مفلوج ہونے والی 9 ماہ کی نشوا زندگی اور موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد لیاقت نیشنل ہسپتال میں دم توڑ گئی۔ اسپتال انتظامیہ کے مطابق متاثرہ بچی نشوہ آئی سی یو میں زیرعلاج تھی اور آج صبح نشوہ نے 9 بج کر40 منٹ پر دم توڑا۔ کراچی کے دارالصحت اسپتال میں نشوا کو غلط انجیکشن لگنے کے باعث لیاقت اسپتال منتقل کیا گیا تھا، نشوا کا تقریبا 71 فیصد دماغ مفلوج ہو چکا تھا۔ دارالصحت ہسپتال میں غلط انجیکشن سے متاثرہ بچی نشوا کا تقریبا دو ہفتے تک علاج جاری رہا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے بھی دکھ کا اظہار کیا کہا کہ تمام کوششوں کے باوجود بچی کو نہ بچا سکے، والدین کو انصاف کی یقین دہانی بھی کرائی۔ وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کے واقعہ پر نوٹس لینے کے بعد کراچی پولیس نے دارالصحت اسپتال کے عملے کے 2 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس ایف آئی آر درج کر کر دیگرملزموں کی گرفتاری کے لئے چھاپے مار رہی ہے۔ کراچی کے دارالصحت ہسپتال کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر شہزاد عالم نے غفلت برتنے پر عہد سے استعفی دے دیا تھا، جبکہ نشوا کیس میں ایس پی طاہر نورانی کو نشوا کے والدین کو دھمکیاں دینے پرعہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔ کراچی کے دارالموت کو بند کرو کے نعریں لئے سول سوسائٹی اور فکس اٹ مہم بھی متاثرہ بچی نشوہ کی آواز بنے تھے۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں