اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کیلئے 11ارب روپے مختص کرنے کی تجویز

لاہور(ادریس شیخ) محکمہ ٹرانسپورٹ کے گزشتہ تین سال کے پورے صوبے کے بجٹ کا 80 فیصد سے زائد صرف ایک شہر کے منصوبے اورنج لائن میٹرو ٹرین کی نذر کر دیا گیا ہے، صرف 35 ارب پورے صوبے کے محکمہ ٹرانسپورٹ کے دوسرے منصوبوں پر خرچ کیا گیا۔

 

پنجاب حکومت نے محکمہ ٹرانسپورٹ کیلئے 3 سال کے دوران 2کھرب 17 ارب میں مختص کیے، اس بجٹ کا 83 فیصد 1کھرب82 ارب صرف اورنج لائن میٹرو ٹرین پر خرچ کیا گیا، صرف 35 ارب پورے صوبے کے محکمہ ٹرانسپورٹ کے دوسرے منصوبوں پر خرچ کیا گیا۔

 

گزشتہ مالی سال میں ٹرانسپورٹ کے پورے صوبے کے بجٹ کا 97فیصد صرف اورنج لائن میں پر خرچ کیا گیا، 2017ء میں 97 ارب میں سے 94 ارب 22 کروڑ 2016 میں 92 ارب میں سے 86 ارب روپے ایک ٹرین پر خرچ کیا گیا۔ آئندہ مالی سال میں محکمہ ٹرانسپورٹ نے اورنج لائن میٹرو ٹرین کیلئے ابتدائی طور پر 11ارب روپے مانگے ہیں۔

 

الائیڈ ورکس کیلئے 66 کروڑ، پیکج ٹو کیلئے 81 کروڑ، پیکج تھری کیلئے 40 اور پیکج فور کیلئے 46 کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویزدی گئی ہے، ذرائع کے مطابق ٹرانسپورٹ کا مکمل بجٹ ایک منصوبے پر خرچ ہونے سے صوبے بھر میں ٹرانسپورٹ کے دیگر منصوبے کھٹائی میں پڑ گئے ہیں اور ان پر ترقیاتی کام نہ ہونے کے برابر ہے۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں