عوامی نیشنل پارٹی کو دیوار سے نہیں لگنے دیں گے: اسفند یار ولی

پشاور(پبلک نیوز) سربراہ اے این پی اسفند یار ولی نے تین روزہ سوگ کا اعلان کر دیا، انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں سے ڈر کر بھاگنے والے نہیں، انتخابات کی شفافیت سے متعلق خدشات ہیں، عوامی نیشنل پارٹی کو دیوار سے نہیں لگنے دیں گے، سربراہ اے این پی میاں افتخار حسین نے بھی یکہ توت حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔
اسفندیار ولی خان نے پشاور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی کی انتخابی مہم جاری رکھنے کا اعلان کیا،ان کا کہنا تھا کہ پہلے باپ گیا پھر بیٹا شہید ہو گیا، بلور فیملی کو اس لیے نشانہ بنایا جا رہا ہے کہ جب تک یہ ہیں پشاور پرکوئی قبضہ نہیں کر سکتا۔

اس خبر کو لازمی پڑھیں:پشاور: اے این پی کی کارنر میٹنگ میں دھماکہ، ہارون بلور سمیت 20افراد شہید

انہوں نے کہا کہ ہر داڑھی والے کو نہیں پکڑ سکتے، ہر داڑھی والے کو طالبان کہنا زیادتی ہو گی، ان میں ہمت ہے تو سیدھی طرح میدان میں آئیں اور مقابلہ کریں، پیٹھ پر وار نہ کریں۔ ان کا کہنا ایک سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ امپائر وہ نہیں رہا، یہ امپائر نہیں دہشت گرد ہیں، یہ لوگ جو بھی کرتے ہیں لیکن ہم نے میدان نہیں چھوڑنا، ہم نے الیکشن لڑنا ہے اور انشاءاللہ جیتنا بھی ہے۔

واضع رہے کہ ایک روز قبل پشاور کے علاقہ یکہ توت میں عوامی نیشنل پارٹی کے انتخابی جلسہ کی کارنر میٹنگ کے دوران خودکش بم دھماکہ ہوا جس میں پی کے 78 سے اے این پی کے امیدوار اور شہید بشیر بلور کے صاحبزادے بیرسٹر ہارون بلور سمیت متعدد افراد اور20افراد شہید،65زخمی ہو گئے تھے۔

ویڈیو کیلئے کلک کریں:

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں