احتساب عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت 21 مئی تک ملتوی کر دی

اسلام آباد(فیصل ساہی) احتساب عدالت اسلام آباد میں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کی سماعت، سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کی چوتھی پیشی، عدالت کی ملزمان کو ریفرنس کی کاپیاں فراہم کرنے کی ہدایت، غیر قانونی ٹھیکوں سے متعلق معاملے میں نیب نے سابق صدر کو پندرہ روز کی مہلت دے دی۔

 

احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے کیس کی سماعت کی، سابق صدر آصف زرداری ان کی ہمشیر فریال تالپور، نمر مجید سمیت اومنی گروپ کے ملزمان بھی عدالت میں پیش ہوئے۔ زین ملک نہ آئے درخواست ضمانت آگئی، جسے عدالت نے قبول کر لیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ تفتیشی افسر علی احمد ابڑو سر پر چوٹ لگنے کی وجہ سے پیش نہیں ہوئے۔ ملزمان کی حاضری کے بعد آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے ریفرنس کی کاپیوں سے متعلق پوچھا تو نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ریفرنس کی کاپیاں آفس میں جمع کرادی ہیں۔ جج ارشد ملک نے ملزموں کو ریفرنس کی کاپیاں فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

 

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ اٹھائیس کاپیاں تیار ہوئی ہیں، باقی کی تیاری کے لئے وقت درکار ہے، جج ارشد ملک نے استفسار کیا کہ ریفرنس کی کاپیوں کی تیاری کب تک ممکن ہے؟ نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ دس دن کا ٹائم درکار ہو گا، عدالت نے سماعت اکیس مئی تک ملتوی کردی۔ سماعت کے بعد میڈیا سے سامنا ہوا تو، صحافی نے سوال کیا، عید کہاں گزاریں گے، جس پر سابق صدر نے کہا دیکھتے ہیں جج صاحب کہاں گزاریں گے۔ سابق صدر نے غیرقانونی ٹھیکوں کے کیس میں نیب سے پندرہ دن کی مہلت کی درخواست کی، جسے نیب نے منظور کر لیا۔ نیب ذرائع کے مطابق دوبارہ طلب کرنے کا فیصلہ نیب خود کرے گا، جس کے بعد نیا نوٹس جاری کیا جائے گا۔ نیب نے سابق صدر آصف زرداری کو نو مئی کو طلب کر رکھا تھا۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں