اثاثہ جات کیس، علیم خان کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید 30 اپریل تک توسیع

لاہور(پبلک نیوز) اثاثہ جات اورآف شورکمپنیوں کے کیس کی سماعت، تحریک انصاف کے رہنماء اور سابق صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید توسیع کر دی گئی، عدالت نے نیب کو حتمی رپورٹ آئندہ سماعت تک پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

 

احتساب عدالت لاہور میں عبدالعلیم خان کے خلاف اثاثہ جات اور آف شور کمپنیوں کے کیس کی سماعت ہوئی، ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج نجم الحسن نے کی، پی ٹی آئی رہنماء کو جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت میں پیش کیا گیا۔ وکیل علیم خان نے عدالت میں اپنا مؤقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ پہلے بھی انہوں نے یہی بات کی اب پھر وہی کر رہے ہیں، کسی کو غیر معینہ مدت تک جیل میں نہیں رکھ سکتے۔

متعلقہ خبر:کرپشن کیس میں گرفتار علیم خان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 20اپریل تک توسیع

نیب پراسیکیوٹر وارث جنجوعہ نے جس پر کہا کہ علیم خان کے خلاف تفتیش مکمل کر لی گئی ہے، رپورٹ تیار کی جا رہی جلد پیش کر دی جائے گی، 23 اپریل کو ہائیکورٹ میں بھی علیم خان کی ضمانت کی سماعت ہے۔ وکیل نیب نے استعفسار کیا کہ نیب بتائے کہ حتمی رپورٹ کب تک پیش کرے گا، جس پر نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ریفرنس اور رپورٹ پیش کرنے کے لیے حتمی رپورٹ نہیں دے سکتے۔

 

نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ چیئرمین نیب کی منظوری کے بعد فائنل رپورٹ اور ریفرنس دائرہو گا، جس کے بعد عدالت نے علیم خان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 30 اپریل تک توسیع کر دی اور آئندہ سماعت پر نیب کو ختمی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا، عدالت نے جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پرعلیم خان کی دوبارہ پیشی کا حکم بھی دے دیا۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں