احتساب عدالت: کامران مائیکل کو 14 روزہ عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

کراچی(حمزہ گیلانی) احتساب عدالت نے کے پی ٹی ہاؤسنگ سوسائٹی کی اراضی غیر قانونی الاٹمنٹ کیس میں کامران مائیکل کو چودہ روزہ عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

 

کے پی ٹی ہائوسنگ سوسائٹی کی اراضی غیر قانونی الاٹمنٹ کا معاملہ۔ احتساب عدالت میں سابق وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ کامران مائیکل کیس کی سماعت ہوئی۔ سابق وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ کامران مائیکل کو عدالت میں پیش کر دیا گیا۔ اہلخانہ بھی کامران مائیکل کے استقبال کیلئے عدالت میں موجود تھے۔

 

نیب کی جانب سے احتساب منتظم عدالت میں کامران مائیکل کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استداعا کی گئی، عدالت نے ریمانڈ دینے سے انکار کر دیا، جس عدالت میں ریفرنس زیر سماعت ہے اسی عدالت میں پیش کیا جائے، عدالتی حکم پر کامران مائیکل کو نیب عدالت نمبر 2 میں جج کے چیمبر میں پیش کر دیا۔

 

مسلم لیگ ن کے رہنماء کامران مائیکل نے احاطہ عدالت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی میرے نہیں سندھ حکومت کے ماتحت ہے۔ من گھڑت بیان پر انکوائری شروع کرائی گئی، سرخرو ہوں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں مسلم لیگ ن کے ساتھ کھڑا رہنے کی سزا دی جا رہی ہے۔

 

نیب تفتیشی افسر، نیب پراسیکیوٹر اور کامران مائیکل کے وکیل بھی چیمبر میں پیش ہوئے۔ نیب کی کامران مائیکل کے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا، وکیل کامران مائیکل بولے ریفرنس دائر ہوچکا۔ جسمانی ریمانڈ نہیں دیا جا سکتا، میرے موکل کو عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیجا جائے۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں