گلوکارہ میشا شفیع کا ہتک عزت کی درخواست سننے والے جج پر اظہارِ عدم اطمینان

لاہور(شاکر محمود اعوان) گلوکارہ میشا شفیع نے ہتک عزت کے دعویٰ پر سماعت کرنے والے جج پر عدم اعتماد کر دیا۔ گلوکارہ نے درخواست سیشن جج کو جمع کروا دی۔ درخواست میں موقف اخیتار کیا کہ ہتک عزت کے دعویٰ پر سماعت کرنے والے معزز جج جانبداری کا مظاہرہ کر رہے ہیں، 

 

گلوکار اور اداکار علی ظفر اور گلوکارہ میشا شفیع کے مابین عدالتی جنگ گھمسان ہونے لگی۔ میشا شفیع نے سیشن جج کو درخواست جمع کرواتے ہوئے سماعت کرنے والے جج پر عدم اطمینان کا اظہار کر دیا۔ دائر درخواست میں موقف اخیتار کیا کہ ہتک عزت کے دعویٰ پر سماعت کرنے والے معزز جج جانبداری کا مظاہرہ کر رہے ہیں، گواہان کے بیانات قلمبند کرواتے وقت بھی موجودہ جج نے گواہان کو جوابات دینے میں معاونت کی، موجودہ جج میرے وکلاء پر بلاوجہ برہم بھی ہوئے۔

 

متعلقہ خبر: گلوکارہ میشا شفیع نے اپنے ذاتی مفادات کے لیے الزام لگایا: علی ظفر

درخواست میں استدعا کی گئی کہ سیشن جج لاہور فوری ہتک عزت کے دعویٰ کو دوسرے جج کے پاس ٹرانسفر کرنے کا حکم دے، ایڈیشنل سیشن جج شکیل احمد گلوکار علی ظفر کے ہتک عزت کی درخواست پر 6 ماہ سے سماعت کر رہے ہیں۔ کچھ روز قبل گلوکار علی ظفر اور میشا شفیع کی درمیان ہونیوالی وٹس ایپ گفتگو منظر عام پر آئی، جس میں میشا شفیع نے جیمنگ سیشن کے بعد علی ظفر کے نام شکریہ کا پیغام بھیجا، میشا نے پیغام میں صاف لکھا کہ 23 دسمبر 2017ء کو پرفارمنس کے دوران ان کا بہترین وقت گزرا، انہوں نے علی ظفر کا شکریہ بھی ادا کیا تھا۔
 
ویڈیو کیلئے کلک کریں:

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں