طالبان کا امریکا کیساتھ امن مذاکرات کی بحالی کا عندیہ

 

پبلک نیوز: طالبان کے مرکزی مذاکرت کار شیر محمد عباس ستانکزئی نے کہا ہے کہ مذاکرات افغانستان میں امن کے لیے واحد راستہ ہیں۔ اگر مستقبل میں امریکی صدر امن مذاکرات کو دوبارہ بحال کرنا چاہتے ہیں تو ان کے دروازے کھلے ہیں۔

 

تفصیلات کے مطابق طالبان کا امریکا کے ساتھ امن مذاکرات پھر سے شروع کرنے پر رضا مندی کا اظہار کر دیا۔ برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کو دیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں طالبان کے مرکزی مذاکرت کار شیر محمد عباس ستانکزئی نے اس بات پر زور دیا کہ مذاکرات افغانستان میں امن کے لیے واحد راستہ ہیں۔

 

عباس ستانکزئی کا مزید کہنا تھا کہ اگر مستقبل میں امریکی صدر امن مذاکرات کو دوبارہ بحال کرنا چاہتے ہیں تو ان کے دروازے کھلے ہیں۔ امریکا نے ہزاروں طالبان کو ہلاک کیا لیکن اگر کسی ایک امریکی فوجی کی بھی ہلاکت ہو جاتی ہے تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ وہ ایسا ردعمل ظاہر کریں کیونکہ دونوں طرف سے کوئی جنگ بندی نہیں کی گئی۔

 

واضح رہے کہ رواں ماہ کابل میں ہونے والے ایک حملے میں ایک امریکی فوجی سمیت 11 دیگر افراد کی ہلاکت کے بعد صدر ٹرمپ نے طالبان کے ساتھ امن مذاکرت منسوخ کر دیے تھے۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں