جعلی ڈاکٹرز کے بعد جعلی عملہ، پمز اسپتال کا نام بدنام ہونے لگا

اسلام آباد (پبلک نیوز) جعلی ڈاکٹرز کے بعد جعلی عملہ بھی شہریوں کی جان سے کھیلنے لگا۔ پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) میں جعلی ڈاکٹرز کے بعد جعلی اہلکار بھی پکڑا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت میں واقع پمز ہسپتال میں جعلی ڈاکٹرز بے نقاب ہونے کے بعد اب جعلی عملہ بھی پکڑا جانے لگا۔ ذرائع کے مطابق پمز کے پتھالوجی ڈپارٹمنٹ سے ناصر نامی جعلی رسپشنسٹ گرفتار کیا گیا ہے۔

پتھالوجی کولکیشن یونٹ سے گرفتار شخص اسلام آباد کی پرائیویٹ لیب سے تعلق رکھتا ہے۔ ذرائع کےمطابق جعلی رسپشنسٹ مریضوں کو پرائیوٹ لے جانے کی راہ ہموار کرنے میں اہم کردار ادا کر رہا تھا۔ پتھالوجی لیب کے ٹیکنیشن کی ملی بھگت سے ملزم بلا خوف کام کر رہا تھا۔

پتھالوجی لیب میں رات کو ڈاکٹرز کے ڈیوٹی پر نہ ہونے کے باعث جعلی اہلکار مریضوں کی جیب کا صفایا کرنے میں بھی مصروف تھا۔ پمز انتظامیہ نے ملزم کو پولیس کے حوالے کر دیا۔

خیال رہے کہ پمز میں جعلی ڈاکٹرز پکڑے جانے کے معاملہ کی بازگشت تاحال سینیٹ کمیٹی میں گونج رہی ہے۔ واقعہ کےاصل کردار 6 ماہ گزرنے کے بعد بھی سامنے نہ آ سکے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں