علیمہ خانم نے کسی قسم کی ٹیکس ایمنسٹی نہیں لی، کمشنر ان لینڈ ریونیو

اسلام آباد (پبلک نیوز) چیف جسٹس پاکستان نے وزیراعظم عمران خان کی بہن علیمہ خانم کی دبئی میں جائیداد کے بارے ایف بی آر سے اب تک کی کی جانے والی تمام کارروائی کی تفصیلات اور ریکارڈ مانگ لیا ہے۔ کمشنر ان لینڈ ریونیو کہتے ہیں کہ علیمہ خانم نے کسی قسم کی ٹیکس ایمنسٹی نہیں لی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے علیمہ خانم کی بیرون ملک جائیدار کے معاملے پر سماعت کی۔ چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ علیمہ خان کو طلبی کے لیے کب نوٹس بھیجا گیا اور اب تک ایف بی آر نے کیا کارروائی کی۔

کمشنر ان لینڈ ریونیو ڈاکٹر اشتیاق نے دبئی کی جائیداد، کرایہ نامہ کے بارے تفصیلی رپورٹ پیش کی اور بتایا کہ ایف بی آر نے 8 فروری کو نوٹس بھیجا۔ بیرون ملک ہونے کے باعث علیمہ خانم کو نوٹس موصول نہیں ہوئے، عدالتی استفسار پر کمشنر نے بتایا بینک سے قرض لے کر فلیٹ خریدا اور کرایہ کے ذریعہ قرضے کی ادائیگی کی گئی اور پھر فروخت کر دیا۔

کمشنر ان لینڈ ریونیو نے واضح کیا کہ بیرون ملک جائیدار کی خریداری ظاہر کرنا لازم ہے۔ ایف بی آر کو ان کے نفع اور نقصان سے کوئی غرض نہیں۔ چیف جسٹس پاکستان نے سماعت 6 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے مکمل ریکارڈ طلب کر لیا۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں