الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف گھیرا تنگ

لاہور(پبلک نیوز) الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف پنجاب پولیس نے گھیرا تنگ کر دیا۔ بیشتر مقامات پر تیسرے روز بھی کریک ڈاؤن جاری رہا۔ کریک ڈاؤن کے دوران 600 سے زائد مختلف جماعتوں کے کارکن گرفتا 120 کے قریب مقدمات درج کر لیے گئے۔

پبلک نیوز کے مطابق پنجاب بھر میں الیکشن پر امن و مان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لیے حساس اداروں اور پنجاب پولیس کا بڑے پیمانے پر الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن آئی جی پنجاب ڈاکٹر سید کلیم امام کی ہدایت پر صوبہ بھر میں جاری رکھنے کی ہداہت گزشتہ تین دنوں  کے دوران  سیاسی جماعتوں کے مزید1م120، مقدمات درج،  600 کے قریب کارکن گرفتار۔ پی ٹی آئی کے 75،مسلم لیگ ن کے 215،

پیپلز پارٹی کے 65 کارکن گرفتار دیگر سیاسی جماعتوں اور آزاد امیدواروں کے 270 حامیوں کو گرفتار کیا گیا۔عادی مجرم ایکٹ کے تحت گذشتہ تین روز کے دوران 250مقدمات درج،407قلندرے درج، 380افراد کو حراست میں لیا گیا۔ اتوار کے روز بھی کئی مقامات سے مختلف جماعتوں کے کارکن گرفتار ۔

 غنڈہ ایکٹ کے تحت گذشتہ 3 روز کے دوران 59مقدمات اور103 قلندرے درج 104افراد کو حراست میں لے کر تحقیقات جاری۔ آر پی اوز، ڈی پی اوز اپنے علاقوں میں آپریشنز کی خود نگرانی کریں، آئی جی پنجاب انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کاروائی کی جائے گی۔

2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں