الیکشن کمیشن کا حکم، سندھ پولیس میں بڑے پیمانہ پر اکھاڑ پچھاڑ

کراچی (پبلک نیوز) الیکشن سے قبل محکمہ سندھ پولیس میں ایک بار پھر بڑے پیمانہ پر اکھاڑ پچھاڑ، 17 اعلیٰ افسران کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ 2ایس پیز، ایک ایس ایس پی اور ایک اے ڈی آئی جی کو اضافی چارج بھی سونپ دیا گیا جبکہ 184 کے ڈی ایس پیز کے بھی  تبادلے کر دیئے گئے۔

پبلک نیوز کے مطابق الیکشن سے قبل الیکشن کمیشن کا بڑا حکم سامنے آ گیا۔ ذونلز ڈی آئی جیز، اضلاع کے ایس ایس پیز کے بعد ایک بار پھر محکمہ سندھ پولیس میں اکھاڑ پچھاڑ کر دی گئی۔

ترجمان سندھ پولیس کی جانب سے نوٹیفکیشن کے 17 ایس پیز، ایس ایس پیز کو مختلف عہدوں پر تعینات کر دیا گیا۔ اے ڈی آئی جی، ایس ایس پی اور دو ایس پی کو اضافی چارج بھی دیا گیا ہے۔

نوٹیفیکیشن کے مطابق آفتاب پٹھان کو ایڈیشنل آئی جی سندھ اور ایس ایس پی ایس ایس یو مقدس حیدر کو اے ڈی آئی جی فرانزک کا چارج بھی دے دیا گیا۔ ایس پی عرفان سمو کو ایس پی سی ٹی ڈی سکھر تعینات کر کے لاڑکانہ کا بھی اضافی چارج دیا گیا ہے۔ ایس پی سائٹ آصف بوگھیو کو ایس پی صدر تعیات کر کے ایس پی کلفٹن کا چارج بھی سونپ دیا گیا جبکہ ناصر آفتاب کو ایس پی سی ٹی ڈی آپریشن ون کراچی، نوید خواجہ کو ایس ایس پی انویسٹی گیش سی ٹی ڈی تعینات کر دیا گیا۔

پرویز عمرانی کو ایس ایس پی انویسٹی گیشن کورنگی ایس زون 3 لگا دیا گیا۔ طارق دھاریجو کو ایس پی ٹیکنیکل اسپیشل برانچ تعینات کیا گیا ہے جبکہ کامران نواز اے ڈی آئی جی آر آر ایف، عارف اسلم اے آئی جی فنانس، حسیب افضل اے ڈی آئی جی ایسٹ مینجمنٹ، جان محمد برہمنی ایس پی گلبرگ اور اسد علی کو اے ڈی آئی جی ریسرچ سندھ تعینات کیا گیا ہے۔

ترجمان سندھ پولیس کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق کراچی سے اندرون سندھ تک 184 ایس ڈی پی اوز کی تقرری و تعیناتی کے حکم نامے بھی جاری کر دیئے ہیں۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں