کراچی میں ایک اور بے گناہ مبینہ پولیس مقابلے کی بھینٹ چڑھ گیا

کراچی(پبلک نیوز) قائد آباد مسلم آباد کالونی میں پولیس اور ڈاکووں کے درمیان مبینہ فائرنگ کے تبادلے میں 12سالہ لڑکا جاں بحق ہو گیا۔ مقا بلے میں دو پولیس اہلکار اور راہگیر بچہ زخمی بھی ہوئے۔ سجاد کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔

 

کراچی پولیس کا ایک اور مبینہ مقابلہ، بے گناہ شہری کی جان جانے کا سبب بن گیا، نارتھ کراچی انڈا موڑ پرپولیس کی فائرنگ سے میڈیکل کی طالبہ نمرہ کی ہلاکت کو زیادہ وقت بھی نہ گزرا تھا کہ لانڈھی قائد آباد کا 12 سالہ سجاد پولیس اور ڈاکووں کی فائرنگ کی زد میں آکر زندگی گنوا بیٹھا۔

 

پولیس حکام کا دعویٰ ہے کہ سادہ لباس پولیس اہلکاروں کو دیکھ کر گینسگٹر شیرزمان نے فائرنگ شروع کر دی۔ جوابی کارروائی میں ملزم خود بھی زخمی حالت میں گرفتار ہوا۔ دوسری جانب 12سالہ سجاد کا پوسٹ مارٹم کرنے والے ڈاکٹر اعجاز احمد کا کہنا ہے کہ سجاد کو سر اور بازو میں دو گولیاں چار سے پانچ فٹ کے فاصلے سے لگیں۔ مقتول سجاد کے اہلخانہ نے واقعے کی شفاف تحقیقات کرانے اور فراہمی انصاف کا مطالبہ کیا ہے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں