ن لیگ حکومت کے گھپلے، 29 ارب کے میٹرو بس منصوبہ میں 34 ارب روپے کی بے ضابطگیاں

لاہور (پبلک نیوز) ن لیگ حکومت کے مزید گھپلے کھل کر سامنے آنے لگے۔ 29 ارب کے میٹرو بس منصوبے میں 34 ارب روپے کی بے ضابگیاں کا انشکاف ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے میٹرو بس منصوبہ کے دوران ہونے والے بے ضابطگیوں سے متعلق چشم کشا رپورٹ جاری کر دی۔ رپورٹ کے مطابق میٹرو بس لاہور منصوبہ 29 ارب کا تھا لیکن بے ضابطگیاں 34 ارب روپے سے زائد کی ہوئیں۔

رپورٹ کے مطابق نیشنل اکنامک کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی کی منظوری کے بغیر ہی 30 ارب 84کروڑ کا منصوبہ میٹرو بس شروع کیا گیا۔ منصوبے کے معاہدہ میں ایک ارب 55 کروڑ ،97 کروڑ 66 لاکھ روپے کا ریکارڈ ہی فراہم نہیں کیا گیا۔

انکشاف کیا گیا کہ غلط اعداد و شمار پر 31 کروڑ کی زائد ادائیگیاں کر دی گئیں۔ ایکسلیٹرز کے ٹھیکوں میں پیپرا رولز کی خلاف ورزی کرکے 16 کروڑ 35 لاکھ روپے کی بے ضابطگیاں کی گئیں۔ میٹرو بس کی تعمیر کے دوران ماحولیاتی تحفظ کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔

یہ بھی رپورٹ میں بتایا گیا کہ میٹرو بس کی تعمیر کے دوران شہر بھر کے پارکس کو ورکشاپ کی طرح استعمال کر کے برباد کر دیا گیا۔ اگر کثیر ترین رقم سبسڈی کی مد میں مختص کی جائے، تب ہی میٹرو بس منصوبہ سود مند ہے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں