کرکٹ کرپشن سے متعلق اینٹی کرپشن یونٹ نے 5 سالہ رپورٹ تیار کر لی

 

لاہور (پبلک نیوز) پاکستان کرکٹ بورڈ کے محکمہ اینٹی کرپشن یونٹ نے کرپشن سے متعلق 5 سالہ رپورٹ تیار کر لی۔ اینٹی کرپشن کوڈ کو ڈومیسٹک کرکٹ میں متعارف کروا دیا گیا۔

 

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے محکمہ اینٹی کرپشن نے5 سال میں ہوئی کھلاڑیوں کے خلاف کارروائی کی رپورٹ تیار کر لی ہے۔ رپورٹ کے مطابق کرکٹر شاہ زیب خان کو 1 سال اور شرجیل خان کو 5 سال کے لیے نا اہل قرار دیا گیا، شاہ زیب خان کو ڈھائی سال کے لیے معطل بھی رکھا گیا۔

 

محکمہ اینٹی کرپشن کی رپورٹ کے مطابق خالد لطیف کو 5 سال اور ناصر جمشید کو 10 سال کے لیے، محمد عرفان کو 1 سال کے لیے اور محمد نواز کو ایک ماہ کے لیے نا اہل قرار دیا گیا۔ اینٹی کرپشن کوڈ کو ڈومیسٹک کرکٹ میں متعارف کروا دیا گیا۔

 

رپورٹ کے مطابق کرپشن کے خلاف کھلاڑیوں، افیشلز،سٹاف اور فرنچائزرز کو متواتر لیکچرز دیئے جاتے ہیں، اینٹی کرپشن یونٹ آئی سی سی سے رابطے میں رہتا ہے۔ محکمہ تمام نشر ہونے والے میچز کی باریک بینی سے مانیٹرنگ کرتا ہے۔ کسی بھی مشکوک حرکت یا اقدام پر فوری تحقیقات کی جاتی ہے۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں