کراچی انسداد تجاوزات آپریشن، غیر قانونی دکانیں اور جھونپڑیاں مسمار کردی گئیں

 

کراچی (پبلک نیوز) کراچی میں تجاوزات کے خلاف آپریشن جاری ہے۔ سپریم کورٹ کے احکامات پر کے ایم سی کی متعدد علاقوں میں کارروائی کی گئی۔ لائٹ ہاؤس، کھارادر، زینب مارکیٹ، لانڈھی، صدر اور ریگل چوک کے اطراف میں غیر قانونی دکانیں اور جھونپڑیاں مسمار کردی گئیں۔

 

سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر کے ایم سی کی متعدد علاقوں میں تجاوزات کے خلاف کاروائی کی گئی۔ کراچی کے ایم سی کے انسداد تجاوزات عملے کی جانب سے ڈسٹرک ساوتھ اور کورنگی کے علاقوں میں کاروائی ک گئی۔ کاروائی میں لائٹ ہاوس، کھارادر، زینب مارکیٹ، لانڈھی، صدر اور ریگل چوک کے اطراف کے حصے شامل ہیں۔

 

کاروائی کے دوران لائٹ ہاوس نالے کے اطراف غیر قانونی دکانیں اور جھونپڑیاں مسمار کردی گئیں جن کی تعداد 280 ہے۔ لائٹ ہاوس میں مزید کاروائی کرتے ہوئے لیڈی ڈیفرین ہسپتال کی دیوار کے ساتھ قائم 70 دکانیں بھی مسمار کی گئیں۔ کھارادر میں کاروائی کرتے ہوئے بخاری مسجد کے قریب فٹ پاتھ پر قائم کمرا مسمار کردیا گیا۔ صدر زینب مارکیٹ میں کاروائی کرتے ہوئے فٹ پاتھ پر قائم ٹریفک پولیس کی چوکی بھی مسمار کردی گئی۔

 

صدر کے علاقے میں مزید کاروائی کرتے ہوئے پوسٹ آفس کے سامنے سے پتھارے، ٹھیلے اور اسٹالز کا بھی صفایا کردیا گیا۔ صدر ریگل چوک پر دکانوں کے اضافی حصے بھی مسمار کر دیئے گئے۔ لاندھی 5 بی میں کاروائی جاری ہے، کاروائی میں فٹ پاتھ پر قائم غیر قانونی کمرے مسمار کیئے جارہے ہیں۔

 

آپریشن سینیئر ڈاریکٹر لینڈ اینڈ اینٹی انکروچمنٹ بشیر احمد صدیقی کی زیر نگرانی کیا جارہا ہے۔ آپریشن میں لیفٹر اور ہیوی مشینری کا استعمال کیا جارہا ہے۔ آپریشن میں کے ایم سی کے عملے سمیت پولیس کی بھاری نفری اور ڈپٹی ڈاریکٹر موجود ہیں۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں