نقیب قتل کیس: مرکزی ملزم راؤ انوار کو رہائی کا پروانہ مل گیا

کراچی (پبلک نیوز) سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کو رہائی کا پروانہ مل گیا ہے۔ ملیر کینٹ میں واقع ان کی رہائش گاہ سے سکیورٹی ہٹا دی گئی ہے۔

پبلک نیوز کے مطابق سندھ کے با اثر پولیس افسر کی گرفتاری کے معاملہ میں نیا موڑ آ گیا۔ انسداد دہشتگردی کی عدالت نے راؤ انوار کی رہائی کا حکم جاری کر دیا۔

عدالت نے سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کے دو مقدمات میں ریلیز آرڈر جاری کر دیئے۔ ریلیزآرڈرمیں جیل حکام کو سابق ایس ایس پی ملیر کی رہائی کے احکامات جاری کیے گئے ہیں۔

راؤ انوار کے ایک مقدمہ میں 10جولائی، دوسرے میں 20جولائی کو ضمانت منظور ہوئی۔ دونوں مقدمات میں عدالت نے ملزم کو 10، 10لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔

واضح رہے کہ سابق ایس ایس ملیر پر نقیب اللہ محسود کو جعلی پولیس مقابلہ میں ہلاک کرنے اور غیر قانونی اسلحلہ اور دھماکہ خیز مواد رکھنے پر الگ الگ دو مقدمات درج کیے گئے تھے۔

یاد رہے کہ سابق ایس ایس پی ملیرکی رہائش گاہ کو سب جیل قرار دیا گیا تھا۔ جس کے باہر سے سکیورٹی ہٹا دی گئی ہے۔ دوسری جانب ڈی ایس پی قمر احمد اور دیگر چار ملزموں کی درخواست ضمانت کا فیصلہ اٹھائیس جولائی کو سنایا جائے گا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں