لاہو ہائیکورٹ: فیصلے کے بعد ملزمان، مدعیوں نے عدالت کو میدان جنگ بنا لیا

لاہور(ادریس شیخ) لاہور ہائیکورٹ میدان جنگ بن گیا، مدعی اور ملزم پارٹی کے افراد کا ایک دوسرے پر حملہ، لاتوں، تھپڑوں اور گھونسوں کا بے دریغ استعمال کیا گیا۔

 

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی نے ملزم شہریار اور شفیق کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی، ملزمان کے شیخوپورہ میں قتل کا مقدمہ درج ہے، دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے ملزم شہریار کی درخواست ضمانت منظور اور شفیق کی درخواست ضمانت مسترد کر دی، عدالتی فیصلے کے بعد جب ملزمان کمرہ عدالت سے باہر آئے تو مدعیوں نے ان پر حملہ کر دیا۔

 

ملزمان کے ساتھ موجود پولیس اہلکار بھی مار سے بچ نہ سکے اور خوب مار کھائی، ملزمان نے بھی جوابا مدعیوں پر حملہ کر دیا اور لاہور ہائی کورٹ میدان جنگ کا منظر پیش کرنے گا۔ سیکیورٹی پر مامور اہلکاروں نے دونوں پارٹیوں کے افراد کو کافی کشمکش کے بعد حراست میں لیکر لاہور ہائیکورٹ سے باہر نکال دیا۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں