آرمی، ایئرفورس، نیوی ایکٹ ترمیمی بل قومی اسمبلی سے منظور

اسلام آباد (پبلک نیوز) قومی اسمبلی میں آرمی، ائیرفورس اور نیوی ایکٹ ترمیمی بل کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا۔ پاکستان مسلم لیگ اور پاکستان پیپلزپارٹی نے بل کی حمایت کی، جماعت اسلامی اور جے یو آئی نے بل کی منظوری میں حصہ نہیں لیا۔ وزیر دفاع پرویز خٹک کی درخواست پر پیپلزپارٹی نے اپنی سفارشات واپس لے لیں۔

 

اسپیکر اسد قیصر کی سربراہی میں قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا۔ وزیراعظم عمران خان بھی شریک ہوئے۔ اسمبلی آمد پر اراکین نے وزیراعظم سے ان کی نشست پر آ کر مصافحہ کیا اور مختصر گفتگو بھی کی۔ اجلاس کی کارروائی شروع ہونے پر چیئرمین قائمہ کمیٹی دفاع امجد علی خان  نے پاکستان آرمی ایکٹ میں ترمیم کی رپورٹ پیش کی۔



وزیر دفاع پرویز خٹک کی درخواست پر پیپلزپارٹی نے  اپنی سفارشات واپس لے لیں۔ وزیر دفاع پرویز خٹک نے پاک آرمی، ائیرفورس اور بحریہ کے ایکٹس میں ترمیم کے بل پیش کیے جس کے بعد تینوں بلوں کی شق وار منظوری لی گئی۔

 

اسپیکر کی جانب سے شق وار ووٹنگ کے بعد ایوان نے پاک آرمی، نیوی اور فضائیہ کے ایکٹس کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا۔  پاکستان مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلزپارٹی نے بل کی حمایت کی جبکہ جماعت اسلامی اور جے یو آئی نے بل کی منظوری میں حصہ نہیں لیا۔

 

 

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں