آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 15 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی


راولپنڈی(پبلک نیوز) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 15 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی ہے۔ سزائے موت پانے والے مجرمان کا تعلق کالعدم تنظیموں سے ہے۔ 20 دہشت گردوں کو قید کی سزا سنائی گئی ہے۔


آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دہشتگرد کارروائیوں میں 15 دہشتگردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگرد مسلح افواد، قانون نافذ کرنے والے اداروں، تعلیمی اداروں اور عوام پر حملوں میں ملوث تھے۔ دہشتگردوں کی کارروائیوں کے نتیجے میں 34 افراد شہید ہوئے، جن میں 21 کا تعلق مسلح افواج سے، 9 فرنٹیئر کانسٹیبلری، 2 کا تعلق پولیس اور دو شہری تھے۔

 

دہشتگرد حمید الرحمان ولد معظم ملا کاتعلق کالعدم تنظیم سے تھا۔ یہ قانون نافذ کرنے والے اداروں اور مسلح افواج پر حملوں میں ملوث تھا۔ جن میں میجر جنرل ثنااللہ، لیفٹیننٹ کرنل توصیف احمد اور نائب صوبیدار محمد اسلم سمیت وطن کے اٹھارہ محفاظوں نے جام شہادت نوش کیا۔

 

سزائے موت پانے والے دوسرے دہشتگرد سعید علی ولد منور خان کا تعلق بھی کالعدم تنظیم سے تھا اور مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملے میں ملوث تھا۔ ان حملوں میں شہری شاہ نذر، نائب صوبیدار محمد حنیف، حولدار محمد نصیر، حولدار محمد قیوم احمد سمیت دو سپاہیوں نے جام شہادت نوش کیا۔۔ مجرم کے قبضے سے دھماکا خیز مواد برآمد ہوا۔

 

انسانیت کے تیسرے دشمن ابرار ولد عبدالرحیم کا تعلق بھی کالعدم تنظٰم سے تھا۔ مجرم پشاور کے قریب کرسچن کالونی خود کش حملے کا ماسٹر مائنڈ اور سہولت کار بھی تھا۔ حملے میں معصوم شہری سیموئل سردار جاں بحق اور تین شہری زخمی ہوئے تھے۔ سزائے موت پانے والے دیگر دہشتگردوں میں فدا حسین، رضا اللہ، رحیم اللہ، عمر زادہ، امجد علی، عبدالرحمان، غلام رحیم، محمد خان، رحیم اللہ، راشد اقبال، محمد غفر اور رحمان علی شامل ہیں۔

 

سزائے موت پانے والے یہ تمام دہشتگرد قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملوں میں ملوث تھے۔ جن میں سب انسپکٹر نور زمان، نائب صوبیدار حسین فراز سمیت چار جوان شہید ہوئے۔ دہشتگرد سوات میں تعلیمی اداروں پر حملے میں بھی ملوث تھے اور ان کے قبضے سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق ان دہشتگردوں نے جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے اپنے جرائم قبول کیے اور سزائے موت کے حقدار ٹھہرے۔

عطاء سبحانی  6 ماه پہلے

متعلقہ خبریں