اسد عمر تحریک انصاف کا حصہ تھے ہیں اور رہیں گا: شاہ محمود قریشی

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ن لیگ کے فیصلوں نے بے شمار وسوسوں کو جنم دیا۔ خرابی صحت کے باعث پارلیمانی رہنماء نہیں رہ سکتے تو اپوزیشن لیڈر کیسے رہ سکتےہیں؟ شہباز شریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر اپوزیشن بضد تھی۔

 

شہر اقتدار میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ایوان میں پارلیمانی رہنماء کی بہت اہمیت ہوتی ہے۔ شہباز شریف قومی سلامتی کے پارلیمانی رکن بھی ہیں۔ اگر شہباز شریف واپس آجاتے تو قیاس آرائیاں جنم نہ لیتیں۔ پارلیمانی رہنماء کی تبدیلی سے ایوان پر فرق پڑے گا۔ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بھی پارلیمنٹ کی اہم کمیٹی ہے۔

 

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ کیا شہبازشریف قائد حزب اختلاف رہیں گے یا نہیں؟ اچانک تبدیلی پر کیا ن لیگ ایوان کواعتماد میں لے گی؟ کیا ن لیگ تبدیلی کی وجوہات سے آگاہ کرے گی؟ کابینہ میں تبدیلیاں معمول کا عمل ہوتی ہیں۔ ن لیگ کے رہنماء بھی تذبذب کا شکار ہیں۔ قیاس آرائیاں ہو رہی ہیں کیا یہ کوئی ڈیل ہے؟ ماضی میں بھی ایسی ہی ڈیل کے تحت ن لیگ کی قیادت باہر چلی گئی تھی۔

 

شاہ محمودقریشی کا کہنا تھا کہ ن لیگ کے فیصلوں نے بے شمار وسوسوں کو جنم دیا۔ خرابی صحت کے باعث پارلیمانی رہنماء نہیں رہ سکتے تو اپوزیشن لیڈر کیسے رہ سکتےہیں؟ شہباز شریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر اپوزیشن بضد تھی۔ اسی ضد کی وجہ سے طویل عرصے تک قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل نہ ہو سکی۔ اسد عمر تحریک انصاف کا حصہ تھے ہیں اور رہیں گا۔

 

ان کا کہنا تھا کہ صدارتی نظام کی باتیں بے بنیاد اور لغو ہیں۔ وزیراعظم نے بھی اس حوالے سے وضاحت کی ہے۔ 18ویں ترمیم کے حوالے سے بھی بے معنی باتیں ہیں۔ کنٹرول لائن پر بھارت جارحیت کا مظاہر کر رہا ہے۔ پاکستان نے کبھی پہلی نہیں کی، ہمیشہ بھارتی جارحیت کا جواب دیا۔ مقبوضہ کشمیر میں شہید ہر کشمیری پاکستانی پرچم میں دفنایا جاتا ہے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں