مانگے تانگے کی حکومت کو ہم نہیں گرائیں گے، خود ہی گرجائیگی: آصف زرداری

اسلام آباد (پبلک نیوز) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف زرداری نے کہا ہے کہ ہم چیئرمین نیب کے سامنے کیوں جائیں انہیں خود پارلیمنٹ کے سامنے پیش ہونا چاہیے۔ نوازشریف کو ریلیف ملنے پر خوشی ہوئی۔ یہ مانگے تانگے کی حکومت ہے پتہ نہیں کتنے دن چلتی ہے۔ ہم آپ کو نہیں گرائیں گے، آپ خود ہی گرجائیں گے۔

 

"نوازشریف کو ریلیف ملنے پر خوشی ہوئی"

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چئیرمین نیب کو پارلیمنٹ کےسامنے حاضر ہونا چاہیے۔ حکومتی ارکان کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا میں تو بہت سے نیب چئیرمین دیکھ چکا ہوں، جب آپ کو بلایا گیا تو آپ کیا کریں گے۔

پی پی پی کے شریک چیئرمین نے بتایا کہ نوازشریف کو ریلیف ملنے پر خوشی ہوئی ہے۔ مریم نواز کو جیل میں نہیں دیکھنا چاہتے۔ یہ مانگے تانگے کی حکومت ہے پتہ نہیں کتنے دن چلتی ہے۔ انھوں حکومتی عہدیداران کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم آپ کو نہیں گرائیں گے، آپ خود ہی گرجائیں گے۔

"ہم نیب کے سامنے کیوں جائیں؟ چیئرمین نیب کو چاہیے وہ پارلیمنٹ کے سامنے پیش ہوں"

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ہمیں کہا جاتا ہے ہم چیئرمین کے سامنے پیش ہوں، ہم ان کے سامنے کیوں جائیں؟ چیئرمین نیب کو چاہیے کہ وہ پارلیمنٹ کے سامنے پیش ہوں۔ ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ حکومت کومشورہ ہے نیب کو ٹائٹ کرے تاکہ ملک چلنے لگے۔

 

 

ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے انھوں نے واضح کیا کہ ہمیں پارلیمنٹ کو عزت دینی ہے اور اسے مضبوط کرنا ہے اور پارلیمنٹ میں شامل نئے دوستوں کو بھی سکھانا ہے، میں پارلیمنٹ اور جمہوریت کے لیے ہی کام کرنا چاہتا ہوں جو کرتا رہوں گا، مریم نواز یا اور کسی کی بہن بیٹی کو جیل میں نہیں دیکھنا چاہتے۔

"حکومت کومشورہ ہے نیب کو ٹائٹ کرے تاکہ ملک چلنے لگے"

سابق صدر کا کہنا تھا کہ آج کل بغیر سوچے سمجھے فیصلے کیے جا رہے ہیں، ہمارے دوست پاکستان کو ناکام ریاست کے طور پر نہیں دیکھنا چاہتے، ہم بھی نہیں۔ آج اپنی بندرگاہ دے کر چین سے کہا ہمارا بارڈر آپ کا بارڈ ر ہے۔

اس امر کا خدشہ بھی انھوں نے ظاہر کیا کہ لیکن برے وقت میں چین بھی آپ کو نہیں بچا سکے گا ہر کوئی اپنے مفاد کو دیکھے گا، کوئی باہر کی طاقت آپ کو نہیں بچا سکتی کیونکہ ہر کوئی اپنے ملک کا سوچتا ہے۔

"مریم نواز یا اور کسی کی بہن بیٹی کو جیل میں نہیں دیکھنا چاہتے"

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو 6 ماہ ہوگئے لیکن ابھی تک کوئی قابل ذکر کام نہیں ہوا، ڈالر اوپر جارہا ہے، اسٹاک ایکسچینج سے 50 ارب ڈالر غائب ہو چکے ہیں، حکومت کا کوئی ادارہ کام نہیں کر رہا، ان کی حکومت کو دیمک کھا رہی ہے۔

بے نظیر بھٹو کے خاوند اور پاکستانی سیاست کے اہم ستون نے پر اعتماد لہجہ میں کہا کہ ہم اس حکومت کو نہیں گرائیں گے اسے تو خود گرنا ہے، مانگے تانگےکی حکومت پتہ نہیں کتنے دن چلتی ہے۔

 

 

حارث افضل  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں