'کشمیر کا واقع اتنا ہی بڑا ہے جتنا مشرقی پاکستان کا سانحہ'

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ مشرقی پاکستان کے بعد کشمیر کا واقعہ اتنا ہی بڑا ہے، اندرا گاندھی نے بھٹو سے کہا فوجی لے لیں یا زمین، بھٹو نے کہا زمین دیدیں، بھارتی قیادت سے ہمیں زمین واپس مل گئی، کہا حکومتی ٹیم کو کیا پتا بین الاقوامی تعلقات کیا ہوتے ہیں، جو آپ کر رہے ہیں اسی لیے تو آج آپ تنہا ہیں۔

 

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت ہونے والے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کشمیر کا واقع اتناہی بڑا ہے جتنا مشرقی پاکستان کا سانحہ ہے۔ جنگ ہارنے کے باوجود اندرا گاندھی سے بات کی اور زمین واپس لی۔ کشمیر کی بھارت نواز قیادت کہہ رہی ہے بھارت سےالحاق غلطی تھی۔ قائداعظم نے کہا تھا دو قومی نظریہ ہی چلے گا۔

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ آپ پوچھتے ہیں میں کیا کروں؟ آپ کا باڈی گارڈ آپ کے کہنے پر گولی نہیں چلائے گا۔ باڈی گارڈ پر گولی چلے گی تو گولی چلائے گا۔ حکومت میرے ہاتھ میں ہوتی تو پہلی پرواز سے یو اے ای اور چین جاتا۔ روس بھی جاتا اور آتے ہوئے ایران سے بھی بات کر کے آتا۔ دوست ممالک کو ساتھ کھڑا کر کے بھارت کو جواب دیتا۔ بھارت کو پتہ ہے پاکستان کے اندر کیسی حکومت اور معیشت ہے۔

 

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں