منی لانڈرنگ کیس:آصف زرداری، فریال تالپور نے سپریم کورٹ کا فیصلہ چیلنج کر دیا

اسلام آباد(امجد بھٹی) جعلی اکاؤنٹ سے منی لانڈرنگ کا معاملہ، سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور نے سپریم کورٹ میں نظرثانی کی درخواست دائر کر دی، درخواست میں موقف اختیا کیا گیا ہے کہ ایف آئی اے بینکنگ کورٹ میں فائنل چالان داخل کرنے میں ناکام رہا۔

 

سپریم کورٹ میں جعلی اکائونٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی نظر ثانی کی درخواست دائر کر دی گئی۔ سردار لطیف کھوسہ کی وساطت سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ایف آئی اے بینکنگ کورٹ میں فائنل چالان داخل کرنے میں ناکام رہا۔

 

ایف آئی اے تمام اداروں کی مدد کے باوجود کوئی قابل جرم شواہد تلا ش نہ کرسکا۔ ایف آئی اے کی استدعا پر سپریم کورٹ نے جے آئی ٹی تشکیل دی۔ آصف زرداری اور فریال تالپورجے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے، جے آئی ٹی براہ راست شواہد تلاش نہ کرسکی اور ان کے موقف کو شامل کئے بغیر رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کی۔

 

درخواست میں دعوی کیا گیا ہے کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ مفروضوں اور شکوک و شبہات پر مبنی تھی،عدالت عظمی نے بھی تسلیم کیا کہ جے آئی ٹی قابل قبول شواہد نہ لاسکی اور پھرمراد علی شاہ کا نام جے آئی ٹی سے نکالنے کے زبانی حکم کو فیصلے کا حصہ نہیں بنایا گیا۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ قانون کی عدم موجودگی میں مختلف اداروں پر مشتمل جے آئی ٹی نہیں بنائی جاسکتی۔ سپریم کورٹ کے حکم سے فئیر ٹرائل کا حق متاثر ہو گا۔ اس لئےسپریم کورٹ سات جنوری کے فیصلے پر نظر ثانی کرے۔۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں