پاکستان میں خودکشی کے رجحان میں خطرناک حد تک اضافہ

لاہور (پبلک نیوز) پاکستان میں خودکشی کے رجحان میں خطرناک حد تک اضافہ ہونے لگا۔ رواں سال صرف لاہور میں 50 افراد نے مختلف وجوہات کے باعث خودکشی کی۔

ایک طرف نت نئی ٹیکنالوجی اور جدید سہولیات، دوسری طرف انسانی مسائل میں اضافہ۔ ذہنی امراض اور خودکشی کے رجحان میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے۔ لاہور میں رواں سال کے دوران 48 افراد نے موت کو گلے لگا لیا۔

اعدادوشمار کے مطابق صرف لاہور شہر میں رواں سال 27 مردوں، 21 خواتین نے مختلف وجوہات کی بناء پر خودکشی کی۔ ذہنی امراض کی ابتداء ڈپریشن سے ہوتی ہے۔

ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ ذہنی امراض سے بچنے کے لیے گھریلو ماحول کو خوشگوار رکھنا ضروری ہے۔ مایوسی سے دور رہتے ہوئے درپیش مسائل کے مثبت حل ڈھونڈنے چاہئیں۔

ڈپریشن کے شکار افراد اگر ابتدائی مرحلے میں ہی ماہرین نفسیات سے رجوع کر لیں تو وہ اس اذیت سے نکل سکتے ہیں۔ جسمانی ورزش اور سیر و تفریح بھی ڈپریشن کو کم کرنے کا آسان ذریعہ ہیں۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں