آنگ سان سوچی نے صحافیوں کی گرفتاری پر تنقید کو مسترد کردیا

 

ویتنام (پبلک نیوز) ویتنام میں ورلڈ اکنامک فارم سے گفتگو میں میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی نے صحافیوں کی گرفتاری اور سزا پر تنقید کو مسترد کر دیا، لیکن اعتراف کیا کہ روہنگیا مسلمانوں کے معاملے کو بہتر طریقے سے حل کیا جا سکتا تھا۔

میانمارکی رہنما آنگ سان سوچی نے خبررساں ادارے کے 2صحافیوں کو سزا پر تنقید کو مسترد کر دیا۔ سوچی نے کہا سزا صحافی ہونے پر نہیں ملکی راز افشا کرنے پر قانون کے تحت دی گئی۔

چند روز قبل  ریاست رخائن میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کُشی سے متعلق رپورٹنگ کرنے والے دو صحافیوں کو سات سات سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

ہزروں مسلمانوں کی نسل کُشی پر خاموش تماشائی بنی رہنے والی میانمار کی رہنما نے اپنی ناکامی کا اعتراف کر لیا اور کہا کہ  روہنگیا مسلمانوں کے معاملے کو بہتر طریقے سے حل کیا جا سکتا تھا۔ قانون کے مطابق رخائن میں تمام گروپوں کو برابر تحفظ فراہم کیا جانا چاہیے تھا۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں