انٹرنیٹ پر موجود انتہا پسند مواد پر پابندی لگائی جائے، آسٹریلوی وزیراعظم

پبلک نیوز: نیوزی لینڈ سانحے کی ویڈیو انٹرنیٹ پر پھیلنے کے بعد آسٹریلین وزیر اعظم نے جی 20ممالک سے انتہا پسندی پر مبنی مواد سے نمٹنے کا مطالبہ کر دیا۔

نیوزی لینڈ کے اسلحہ ڈیلر نے انکشاف کیا کہ کرائسٹ چرچ کی مساجد پر حملہ کرنے والے دہشت گرد نے 5 میں سے 4 ہتھیار آن لائن خریدے۔ آسٹریلوی وزیرِ اعظم اسکاٹ مویسن نے نیوزی لینڈ واقعے پر سوشل میڈیا کریک ڈاؤن کی اپیل کر دی۔

آسٹریلوی وزیر اعظم اسکاٹ موریسن نے جی20 سربراہ اجلاس کے میزبان جاپانی وزیراعظم کو خط میں لکھا کہ انٹرنیٹ پر موجود انتہا پسند مواد پر پابندی لگائی جائے۔

انہوں نے مزید کہا ہے۔ کہ کسی بھی نوعیت کے دہشت گرد انٹرنیٹ کو بطور ہتھی۔ار استعمال کر سکتے ہیں، ٹیکنالوجی فرمز کو انٹرنیٹ پر موجود انتہا پسند مواد ہٹانے پر زور دیا جائے

ادھر نیوزی لینڈ کے سب سے بڑے اسلحہ ڈیلر نے بتایا ہے کہ برینٹن ٹیرینٹ دہشت گردنے 5 میں سے 4 ہتھیار آن لائن خریدے۔ لیکن پانچویں ہتھی۔ار سیمی آٹو میٹک رائفل کے بارے میں لاعلمی کا اظہار کیا

ڈیلر کے مطابق آن لائن خریداری کے وقت ٹیرینٹ کے پاس اے کلاس اسلحہ لائسنس موجود تھا۔ اس لیے اسے اسلحہ بیچ کر کوئی غلط کام نہیں کیا۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں