فیاض الحسن چوہان کو وزارت اطلاعات سے ہٹانے کا فیصلہ کر لیا گیا، ذرائع

لاہور (شعیب ہاشمی) وزیراعظم کے دورہ لاہور کی اندرونی کہانی پبلک نیوز سامنے لے آیا۔ ذرائع کے مطابق پنجاب کے وزیراطلاعات کی تبدیلی کا امکان ہے۔ عائشہ چودھری کے رواں ماہ ہی پنجاب کی وزارت اطلاعات کا قلمندان سنبھالنے کا امکان ہے۔ ان کو کابینہ میں شامل نہ کرنے پر وزیراعظم نے وزیراعلیٰ سے اظہار ناراضی بھی کیا، ان کو صوبائی کابینہ میں شامل کرنے کی ہدایت بھی کر دی۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے مرکزاور پنجاب میں حکومت کی میڈیا ٹیم میں تبدیلیاں لانے پر غور شروع کر دیا۔ اتوار کے روز تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے تحریک انصاف کی حکومت کے میڈیا منیجرزکی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کیا۔ پنجاب کے صوبائی وزیراطلاعات اور وفاقی وزیراطلاعات کو کارکردگی بہتر نہ بنانے پر ان کے عہدوں سے ہٹا دیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عائشہ چودھری کو پنجاب کابینہ کا حصہ نہ بنانے پر عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ناراضی کا اظہار کیا۔ وزیراعظم کی پنجاب کابینہ میں توسیع کرتے ہوئے عائشہ چودھری کو صوبائی کابینہ میں شامل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ رواں ماہ کے دوران ہی عائشہ چودھری کے وزیراطلاعات پنجاب کا قلمدان سنبھالنے کا امکان ہے۔

سید صصمام بخاری کی سربراہی میں تحریک انصاف کی حکومت کا ایک خصوصی میڈیا سیل قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ خصوصی سیل وزیراعظم عمران خان اور تحریک انصاف کی حکومت کے مثبت امیج کو میڈیا میں اجاگر کرنے کے لیے کام کرے گا۔

تحریک انصاف کے ناراض اور خاموش ہو کر گھروں میں بیٹھ جانے والے سوشل میڈیا سیل کے رضاکار نوجوانوں کو بھی متحرک کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

احمد علی کیف  6 ماه پہلے

متعلقہ خبریں