اعظم سواتی وفاقی وزیر کے عہدہ سے مستعفی ہو گئے

اسلام آباد (پبلک نیوز) قانون سب کے لیے برابر، کوئی بالاتر نہیں۔ وزیراعظم کا انصاف مشن اپنا راستہ بنانے لگا۔ بابراعوان کے بعد سینیٹر اعظم سواتی نے بھی اپنا استعفیٰ وزیراعظم کو پیش کر دیا۔ وزیراعظم نے استعفیٰ منظور کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق آئی جی اسلام آباد جان محمد کے استعفیٰ سے شروع ہونے والا معاملہ وفاقی وزیر اعظم سواتی کے استعفیٰ تک آن پہنچا۔ وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈٹیکنالوجی اعظم سواتی نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی اور سپریم کورٹ میں زیر سماعت مقدمہ کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔

اعظم سواتی نے وزیراعظم کو استعفیٰ پیش کر دیا۔ جس میں مؤقف اختیار کیا کہ ان کے خلاف سپریم کورٹ میں مقدمہ زیر سماعت ہے۔ جس کا فیصلہ آنا ابھی باقی ہے۔ اس لیے وہ بطور وفاقی وزیرسائنس اینڈٹیکنالوجی ذمہ داریاں انجام نہیں دے سکتے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے اعظم سواتی کا استعفیٰ منظور کرلیا ہے۔ وہ بطور سینٹر اپنی ذمہ داریاں انجام دیتے رہیں گے۔ اعظم سواتی کو دوبارہ قلمدان دینے یا نہ دینے  کا فیصلہ سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے بعد کیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس سپریم کورٹ نے مقدمہ میں اعظم سواتی کا راضی نامہ اور معافی نامہ مسترد کر دیا تھا جس کے بعد اعظم سواتی پر  قانونی اور اخلاقی دباو بڑھ گیا۔ تحریک انصاف کی قیادت بھی اعظم سواتی کے معاملے پر سخت تشویش سے دوچار تھی ،تاہم اعظم سواتی نے خود ہی مستفی ہونے کا فیصلہ کیا۔

واضح رہے کہ پبلک نیوز نے اعظم سواتی کے مستعفی ہونے کی خبر کئی گھنٹے قبل اپنے ناظرین تک سب سے پہلے پہنچائی جس کی وزیراعظم آفس نے بھی تصدیق کر دی۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں