لذت اور غذائیت سے بھرپور 'بھے' میں یرقان کا بھی علاج

 

پبلک نیوز: بھے جنوبی پنجاب کی منافع بخش فصل ہے۔ جو غذائیت اور لذت میں اپنی مثال آپ ہے۔ سندھ اور ملتان کی منڈیوں میں اس  کی مانگ بھی زیادہ ہے۔ اور ظاہر پیر کی بھے فصل کی کاشتکاری خاص اہمیت کی حامل ہے۔ بھے کھانے والوں پر یرقان جیسی بیماریاں حملہ آور نہیں ہوتیں۔

 

بھے جنوبی پنجاب خصوصاً رحیم یار خان اور سندھ میں کاشت کی جاتی ہے۔ یہ گاجر، آلو، مولی اور شلجم کی طرح زمین کی تہہ میں پیدا ہوتی ہے۔ بھے لذت اور غذائیت کے اعتبار سے اپنی پہچان آپ ہے۔ اس کو مختلف سبزیوں چاول اور گوشت کے ساتھ پکایا جاتا ہے اور اس کے پکوڑے بھی بنائے جاتے ہیں۔ بھے میں وٹامن سی کی وافر مقدار ہوتی ہے ڈاکٹروں کے مطابق بھے کھانے والوں پر یرقان جیسی بیماریاں حملہ آور نہیں ہوتیں۔

 

شہریوں کا کہنا ہے کہ بھے کے کچے بیج بھی لوگ بڑے شوق سے کھاتے ہیں۔ بھے کسانوں کے لیے منافع بخش فصل ہے کیونکہ یہ 80 سے 90 دن میں تیار ہو جاتی ہے اور اس کی کاشت پر زیادہ لاگت بھی نہیں آتی۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں