ضمنی الیکشن کے بڑے ٹاکرے، کون جیتا، کون ہارا؟

پبلک نیوز: ضمنی انتخابات میں چار نشتیں جیتنے کے بعد قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی کے ارکان کی تعداد ایک سو پچپن ہو گئی، ن لیگ کے اراکین قومی اسمبلی کی تعداد اکاسی سے پچاسی ہو گئی، پیپلزپارٹی کوئی سیٹ نہ جیت سکی، قومی اسمبلی میں جیالوں کی تعداد 54 ہی رہے گی۔

قومی اسمبلی کی گیارہ نشستوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف اور ن لیگ نے چار چار نشستیں حاصل کیں۔ مسلم لیگ ق نے دو اور متحدہ مجلس عمل نے ایک نشست اپنے نام کی۔ لاہور کے این اے 131 سے مسلم لیگ ن کے خواجہ سعد رفیق نے تحریک انصاف کے ہمایوں اختر کو شکست دی۔

این اے 124 سے ن لیگ کے شاہد خاقان عباسی نے پی ٹی آئی کے غلام محی الدین دیوان کو شسکت دی۔ این اے 243 کراچی کے تحریک انصاف کے عالمگیر خان نے ایم کیو ایم کے عامر ولی چشتی کو شسکت دی۔ اسلام آباد سے این اے 53 پر تحریک انصاف کے علی نواز اعوان نے مسلم لیگ ن کے وقار احمد کو ہرا دیا۔

این اے 60 راولپنڈی سے تحریک انصاف کے امیدوار شیخ رشید کے بھتیجے شیخ رشد شفیق نے ن لیگ کے ملک سجاد خان کو شکست دی۔ اٹک کے حلقے این اے 56 سے ن لیگ نے ملک سہیل خان نے تحریک انصاف کے ملک خرم علی کو ہرا دیا۔

این اے 65 چکوال سے مسلم لیگ ق کے چودھری سالک حیسن کامیاب قرار پائے، تحریک انصاف کے محمد یعقوب دوسرے نمبر پر رہے۔ این اے 69 گجرات سے ق لیگ مونس الہٰی نے ن لیگ عمران ظفر کو شسکت دی۔

این اے 103 فیصل آباد سے ن لیگ علی گوہر خان نے تحریک انصاف کے محمد سعد اللہ کو شسکت دی۔ این اے 63 راولپنڈی سے تحریک انصاف کے غلام سرور خان کے صاحبزادے بیرسٹر منصور حیات نے مسلم لیگ ن کے عقیل ملک کو ہرایا۔ بنوں کے حلقے این اے 35 سے ایم ایم اے کے زاہد اکرم درانی فاتح قرار پائے، تحریک انصاف کے نسیم علی شاہ دوسرے نمبر پر رہے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں