پشاور: سب سے بڑا سرکاری ہسپتال، کارڈیک سرجری یونٹ ایک ماہ سے بند

پشاور (پبلک نیوز) صوبائی دارالحکومت کا سب سے بڑا سرکاری ہسپتال اور کارڈیک سرجری یونٹ ایک ماہ سے بند، آپریشن کے لیے درکار ضروری آلات و مشینری بھی نایاب۔

ذرائع کے مطابق پشاور کا سب سے بڑا سرکاری ہسپتال اور کارڈیک سرجری یونٹ ایک ماہ سے بند پڑا ہے۔ آپریشن کے لیے درکار ضروری آلات و مشینری تاحال مہیا نہ کیے جا سکے۔ امراض قلب میں مبتلا مریضوں کی سرجریز 12 اپریل کو بند کردی گئیں تھیں۔

لیڈی ریڈنگ کارڈیک سرجری غریب مریضوں کے لیے واحد یونٹ تھا۔ ہفتے میں 10 سے زائد سرجریز کی جاتی تھیں۔ ترجمان ہسپتال کے مطابق کارڈیک سرجری یونٹ معاملہ بورڈ آف گورنرز اجلاس میں زیر بحث لایا جائے گا۔ مشینری و آلات خریدے جارہے ہیں۔

کارڈیالوجی و کارڈیک سرجری کے لیے نئی فیکلٹی رکھنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ 30 اپریل کو پروفیسرز اور ایسوسی ایٹ پروفیسر کی اسامیاں مشتہر کی گئیں تھیں۔ یونٹ کے حوالے سے حتمی فیصلہ بورڈ آف گورنرز کریں گے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں