وفاقی حکومت کا سندھ کے 3بڑے ہسپتال تحویل میں لینا صوبائی خودمختاری پر حملہ ہے: بلاول

کراچی (پبلک نیوز) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے سندھ کے تین اسپتالوں کا کنٹرول اپنے ہاتھوں میں لینے کا اقدام صوبائی خودمختاری پر حملے کے مترادف ہے۔ وفاقی حکومت عوامی غیظ و غضب سے قبل سندھ کے تین اسپتالوں سے متعلق اپنا فیصلہ واپس لے۔

شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہم ہر فورم پر وفاقی حکومت کے اس اقدام کی مزاحمت کریں گے۔ وفاقی حکومت نے سپریم کورٹ میں حکومت سندھ کی نظرثانی اپیل پر فیصلہ آنے تک کا انتظار بھی گوارا نہیں کیا۔ چیئرمین نیب کی جانب سے وفاقی وزراء کے خلاف تحقیقات روکنے کے اعترافی بیان اور وفاقی حکومت کے حالیہ اقدام نے ملک میں آئینی بحران کو ظاہر کردیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ جے پی ایم سی، این آئی سی وی ڈی اور این آئی سی ایچ پر سندھ کے عوام کے اربوں روپے لگے ہوئے ہیں۔ اٹھارویں ترمیم کے تحت ملنے والے مذکورہ اسپتالوں میں حکومت سندھ نے انقلابی اقدامات اٹھائے۔ این آئی سی وی ڈی کا دیگر شہروں میں قیام حکومتِ سندھ کا قابل تحسین اقدام ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ این سی آئی وی ڈی میں ملک بھر سے آنے والے مریضوں کے علاج کے اخراجات سندھ حکومت نے اُٹھا رکھے تھے۔ پاکستان پیپلز پارٹی اور سندھ کے عوام اپنے ٹیکس اور محنت سے بنائے اثاثوں کو غصب نہیں کرنے دیں گے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں