صحافیوں کو قتل کیا جاتا ہے، قاتل پکڑے نہیں جاتے: بلاول بھٹو

کراچی (پبلک نیوز) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ صحافیوں کو قتل کیا جاتا ہے، قاتل پکڑے نہیں جاتے۔ آزادی اظہار کا حق تمام حقوق کی ماں ہے۔ صحافیوں قتل کرنے والے صرف ایک ملزم کو سزا مل سکی۔

پریس فریڈم ڈے پر کراچی پریس کلب میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ صحافیوں کے قتل کے واقعات میں ملوث ملزمان یا توگرفتار نہیں ہوتے یا سزائیں نہیں دی جاتیں۔ صحافیوں کے قتل کے حوالے سے 16 مقدمات درج ہوئے، جن میں 6 پر عدالتی کارروائی ہوئی اور صرف ایک کیس میں ملزم کو سزا مل سکی۔

صحافیوں کے حق میں تقریر کرتے ہوئے جمہوریت حوالے سے انھوں نے کہا کہ جمہوری قوتوں پر قدغن لگانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ جمہوری قوتوں کے لیے کراچی پریس کلب ہمیشہ اہم رہا۔

اپنی تقریر سے پہلے بلاول بھٹو نے اسد عمر کو یاد کرنے کا بہانہ بھی ڈھونڈ لیا۔ کہنے لگے انگریزی میں تقریر تیار کی ہے، امید ہے یہاں اعتراض کے لیے کوئی اسدعمر نہیں ہو گا۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں