کٹھ پتلی وزیراعظم ہمارے لیے کوئی پریشانی نہیں کھڑی کر سکتا: بلاول بھٹو

کندھ کوٹ (پبلک نیوز) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ شہید ذوالفقار بھٹو کا دیا گیا آئین ملک کا پہلا آئین تھا، پیپلز پارٹی نے بھٹو کے آئین کو 2008 میں بحال کیا۔ شہید بھٹو نے نعرہ لگایا تھا روٹی، کپڑا اور مکان۔

 

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ سلیکٹڈ حکومت عوام کے مینڈیٹ کا احترام نہیں کرتی۔ سیاست میں عوام  اور کرکٹ میں ایمپائر کی مرضی چلتی ہے۔ اٹھارہویں ترمیم کے خلاف سازشیں ہو رہی ہیں۔ کٹھ پتلی وزیراعظم ہمارے لیے کوئی پریشانی نہیں کھڑی کر سکتا۔

 

بلاول کا کہنا تھا کہ ہر شعبے میں بے روزگاری بڑھ رہی ہے۔ معلوم نہیں عثمان بزدار کو وزیراعلیٰ کیوں بنایا گیا۔ شہید ذوالفقار بھٹو کا دیا گیا آئین ملک کا پہلا آئین تھا، پیپلز پارٹی نے بھٹو کے آئین کو 2008 میں بحال کیا۔ شہید بھٹو نے نعرہ لگایا تھا روٹی، کپڑا اور مکان۔

 

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے ساتھ مل کر طے کیا معاشی، انسانی اور جمہوری حقوق پر سمجھوتہ نہیں ہوگا، 18 ویں ترمیم جو سندھ اور ملک کو تحفظ دیتی ہے خطرے میں ہے، پیپلز پارٹی 18 ویں ترمیم پر آنچ نہیں آنے دے گی۔

 

میڈیا کے خلاف سوچی سمجھی سازش کی جا رہی ہے، حکومت نے وعدہ کیا تھا لوگوں کو نوکریاں دیں گے، حکومت نے عوام کو صرف بے روزگار کیا ہے۔ سندھ حکومت نے عالمی معیار کے صحت کے ادارے بنائے ہیں۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں