یہ پی ٹی آئی نہیں، پی ٹی آئی ایم ایف حکومت ہے: بلاول بھٹو

اسلام آباد (پبلک نیوز) چئیرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ دہشت گردوں سے تعلق رکھنے والے وزرا کو ہٹایا جائے، بجلی، گیس، پٹرول اور کھانے پینے کی اشیاء کو مہنگا کر دیا گیا۔ ایسا تو نہیں آئی ایم ایف وزیر خزانہ کا فیصلہ کر رہا ہے؟ حکومت کی نااہلی کی سزا پورا پاکستان بھگت رہا ہے۔

 

قومی اسمبلی اجلاس سے اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کل داتا دربار پر دہشت گردی کا واقعہ افسوس ناک ہے۔ دہشت گردوں سے تعلق رکھنے والے وزرا کو ہٹایا جائے۔ حکومت کو نیشنل ایکشن پلان پرعملدر آمد کرنا چاہئے۔

 

مہنگائی کا تذکراہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مہنگائی کی وجہ سے عوام پریشان ہیں۔ ملکی معاشی حالات پر بھی عوام پریشانی کا شکار ہیں۔ بجلی، گیس، پٹرول اور کھانے پینے کی اشیا کو مہنگا کر دیا گیا۔ قیمتوں میں اضافہ حکومتی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ مزدورں، کسانوں، بزرگ پینشنرز کا معاشی قتل ہورہا ہے۔ عوام کی جیب خالی ہے، ان کے پاس کوئی پلان کوئی مشن نہیں۔ حکومت کی نااہلی کی سزا پورا پاکستان بھگت رہا ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ایسا تونہیں آئی ایم ایف وزیرخزانہ کا فیصلہ کر رہا ہے؟ آئی ایم ایف ٹیم کو ہم نہیں مانتے۔ یہ پی ٹی آئی نہیں، آئی ایم ایف پی ٹی آئی حکومت ہے۔

 

حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت اپوزیشن کی تنقید برداشت نہیں کرتی۔ حکومت اتنی ڈھیٹ کیوں ہے؟ 18ویں ترمیم کے باعث صوبے دیوالیہ نہیں ہور ہے۔ آپ پنجاب کے 238 ارب روپے کھا گئے ہیں۔ آپ سندھ حکومت سے سیکھیں ٹیکس کو لیکشن کیسے کرتے ہیں۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں