سلیکٹڈ حکومت نے معیشت اور خارجہ پالیسی کو پامال کر دیا، بلاول بھٹو

 

اسکردو (پبلک نیوز) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سلیکٹڈ حکومت نے معیشت اور خارجہ پالیسی کو پامال کر دیا۔ احتساب کے نام پر اپوزیشن سے سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے۔ حکومت نے ایک سال میں 5 سالہ دور سے بھی زیادہ قرض لیا۔ کشمیر کے لیے 70 ہزار سال بھی جنگ لڑنا پڑی تو لڑیں گے۔ مودی پیلٹ گنز سے ان کے آزادی کا خواب نہیں چھین سکتے۔

 

تفصیلات کے مطابق اسکردو میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو غریب عوام کی سفیر تھیں۔ کارکنوں کی وفاداری کو سلام پیش کرتا ہوں۔ آپ آج بھی شہیدوں کی جماعت کے ساتھ کھڑے ہیں۔ پاکستان تاریخ کے نازک دور سے گزر رہا ہے۔ سلیکٹڈ حکومت نے معیشت اور خارجہ پالیسی کو پامال کر دیا۔ آج ملک میں غریب دو وقت کی روٹی کے لیے پریشان ہے۔ اقتدار میں آنے سے پہلے وعدے کرنا آسان، نبھانا مشکل ہوتا ہے۔

 

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ خان صاحب نے کہا تھا خودکشی کرلوں گا قرض نہیں لوں گا۔ ایک کروڑ نوکریاں اور 50 لاکھ گھر دینے کا وعدہ کیا تھا۔ تجاوزات کے نام پر غریبوں کے گھروں سے چھت چھین لی گئی۔ ملکی معیشت کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا۔ احتساب کے نام پر اپوزیشن سے سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے۔ اپوزیشن رہنماؤں پر ہیروئن ڈال کر گرفتار کیا جاتا ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ کیا اب اس ملک سے کرپشن ختم ہوگئی۔ پشاور میٹرو پر 100 ارب لگ گئے، کسی نے نہیں پوچھا۔ حکومت نے نوکریاں دینے کی بجائے لوگوں کو بیروزگار کر دیا۔ سیاسی مخالفین کی خواتین کو بھی نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ حکومت نے ایک سال میں 5 سالہ دور سے بھی زیادہ قرض لیا۔ کرپٹ کرپٹ کا نعرہ لگا کر اپوزیشن کو جیل میں بند کر دیا۔ مریم نوازکو 70 سالہ والد کے سامنے گرفتار کیا گیا۔

 

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ فریال تالپور کوعید کے دن گرفتار کیا گیا۔ آج کشمیر کے مظلوم عوام پاکستان کی طرف دیکھ رہے ہیں۔ اوورسیز پاکستانی ڈالروں کی بارش کر دیں گے۔ ڈالروں کی بارش تو نہیں ہوئی، ڈالر 160 کا ہو گیا۔ ریکو ڈیک کیس میں پاکستان نے 6 بلین روپے جرمانہ ادا کرنا ہے۔ مودی گجرات کا قصائی ہے، کشمیر میں ظلم و ستم کر رہا ہے۔ مودی تم کل گجرات کے قاتل تھے، آج کشمیر کے قاتل ہو۔

 

ان کا مزید کہنا تھا کہ نریندر مودی کو تاریخ 'قاتل' کے نام سے یاد رکھے گی۔ بھٹو شہید نے بھارت سے 90 ہزار قیدی چھڑائے۔ حکومت عوام پر مہنگائی اور ٹیکسز کی بھرمار کر رہی ہے۔ کشمیر کے لیے 70 ہزار سال بھی جنگ لڑنا پڑی تو لڑیں گے۔ مودی تم جبر سے کشمیریوں کے دل پر حکومت نہیں کر سکتے۔ مودی تم لوگوں کو شہید کر سکتے ہو، جذبہ حریت ختم نہیں کر سکتے۔ مودی پیلٹ گنز سے ان کے آزادی کا خواب نہیں چھین سکتے۔

 

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں