قومی ترانے کے خالق ابو الاثرحفیظ جالندھری کی سالگرہ

لاہور (پبلک نیوز) پاکستانی قومی ترانے کے خالق، ابو الاثرحفیظ جالندھری کی آج سالگرہ ہے۔ اردو زبان کے پایہ کے شاعر اور افسانہ نگار کی حیثیت سے بھی اپنا مقام بنایا۔ انہوں نے 4 جلدوں پر مشتمل شاہنامہ اسلام تخلیق کی۔ 

حفیظ جالندھری 14 جنوری 1900ء کو ہندوستان کے شہر جالندھر میں پیدا ہوئے۔ 1947 میں تقسیم ہند کے وقت لاہور آ گئے، حفیظ جالندھری نے تعلیمی اسناد حاصل نہیں کیں لیکن اردو زبان کے پایہ کے شاعر اور افسانہ نگار کی حیثیت سے اپنا مقام بنایا۔

انہوں نے 4 جلدوں پر مشتمل شاہنامہ اسلام تخلیق کی۔ حفیظ جالندھری کا دوسرا بڑا کارنامہ قومی ترانہ ہے۔ محمد حفیظ کی لکھی گئی نظم ابھی تو میں جوان ہوں کو ملکہ پکھراج نے گا کر شہرت دی۔

حفیظ جالندھری کی خدمات کے اعتراف میں انہیں ہلال امتیاز اور صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔

ارادے باندھتا ہوں سوچتا ہوں توڑ دیتا ہوں

کہیں ایسا نہ ہو جائے کہیں ویسا نہ ہو جائے

وہ 21 دسمبر 1982 کو لاہور میں 82 سال کی عمر میں وفات پا گئے، وہ مینار پاکستان کے سایہ تلے آسودہ خاک ہیں۔

حارث افضل  7 ماه پہلے

متعلقہ خبریں