لاہور چوبرجی کے قریب رکشے میں دھماکا، 14 افراد زخمی

لاہور (پبلک نیوز) لاہور بڑی تباہی سے بچ گیا، چوبرجی کے قریب رکشے میں ہونے والے دھماکے میں 14 افراد زخمی ہو گئے۔ خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا، تمام زخمیوں کی حالت خطرے سے باہر ہے، دھماکے میں دو سے ڈھائی کلو بارودی مواد استعمال ہوا، واقعہ کا مقدمہ سی ٹی ڈی کی مدعیت میں درج کر لیا گیا۔

 

صبح 11 بج کر 25 منٹ پر لاہور کے علاقے چوبرجی کے قریب کھڑے رکشہ میں دھماکا ہو گیا۔ دھماکے کی شدت سے قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے، قریب کھڑی موٹرسائیکل بھی تباہ ہو گئی، اطلاع ملتے ہی پولیس اور بم ڈسپوزل اسکواڈ کا عملہ جائے وقوع پر پہنچا۔ زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا گیا۔

 

زخمی رکشہ ڈرائیور رمضان نے پولیس کو بیان دیا کہ شیراکوٹ سے سواری بیٹھی جسے سمن آباد اتارا۔ رکشہ ڈرائیور کے مطابق سواری کے پاس ایک شاپنگ بیگ تھا جو رکشے میں ہی رہ گیا۔ ڈرائیور نے بتایا کہ وہ رفع حاجت کے لیے رکشے سے نکلا ہی تھا کہ دھماکا ہو گیا۔

 

بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق جائے وقوعہ سے بال بیرنگ اور مشکوک اشیا ملی ہیں۔ دھماکے میں دو سے ڈھائی کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا۔

 

ڈی آئی جی انوسٹی گیشن کے مطابق پہلے لگا کہ یہ سیلنڈر دھماکا ہے، ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا کہ دھماکا گیس سلینڈر پھٹنے سے نہیں ہوا، جائے وقوعہ سے بال بیئرنگ بھی ملے۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کر لی، زخمیوں کو بہترین سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔ واقعہ کا مقدمہ سی ٹی ڈی کی مدعیت میں درج کر لیا گیا، دہشت گردی کی دفع بھی شامل ہے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں