عوامی خدمت کے سفر میں وزیراعلیٰ پنجاب کیساتھ قدم سے قدم ملا کر چلیں گے، انیل مسرت

 

لاہور(پبلک نیوز) معروف برطانوی کاروباری شخصیت انیل مسرت نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کی۔ ملاقات میں انھوں نے حکومت پنجاب کے اشتراک سے ہر ڈویژن میں ہسپتال بنانے کے عزم کا اظہار کیا۔ انھوں نے کہا کہ ہسپتال ان لوگوں کے لیے بنائے جائیں گے جہاں صحت کی سہولیات کم ہوں گی۔ ہسپتالوں میں ایمرجنسی اور ٹراما سینٹرز بھی بنائے جائیں گے۔

 

لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے معروف برطانوی بزنس مین انیل مسرت کی سربراہی میں وفد کی ملاقات ہوئی۔ انیل مسرت نے حکومت پنجاب کے اشتراک سے ہر ڈویژن میں ہسپتال بنانے کا اعلان کردیا۔  

 

برطانوی بزنس مین انیل مسرت کا کہنا تھا کہ مریضوں کے علاج معالجے کے لیے صوبے کے 9 ڈویژن میں جدید ہسپتال بنائیں گے۔ ہم ہسپتال ان علاقوں میں بنانا چاہتے ہیں جہاں صحت کی سہولتیں کم ہیں۔ ان ہسپتالوں میں عام مریضوں کو ہیلتھ کیئر کی معیاری سہولتیں فراہم کریں گے۔ ہسپتالوں میں ایمرجنسی اور ٹراما سینٹرز بھی بنائے جائیں گے۔ ان ہسپتالوں کی اونرشپ کے لیے کمیونٹی کو بھی شامل کیا جائے گا۔

 

انیل مسرت کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی قیادت میں پنجاب تیزی سے درست سمت کی جانب بڑھ رہا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محنت اور جذبے کے ساتھ عوام کی خدمت کر رہے ہیں۔ اوورسیز پاکستانیز بھی عوام کی فلاح و بہبود کے لیے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے عملی اقدامات سے خوش ہیں۔ عوامی خدمت کے سفر میں وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے ساتھ قدم سے قدم ملا کر چلیں گے۔

 

 

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ انیل مسرت کی جانب سے ہر ڈویژن میں ہسپتال بنانے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔ ہمارا مقصد عام آدمی کو علاج معالجے کی معیاری سہولتیں مہیا کرنا ہے۔ پنجاب حکومت عام آدمی کو بہتر طبی سہولتیں فراہم کرنے کے لیے جامع پروگرام پر عمل پیرا ہے۔ ملتان میں اربوں روپے کی لاگت سے نشتر 2 ہسپتال بنایا جا رہا ہے۔

 

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ ڈیرہ غازی خان میں کار ڈیک ہسپتال کے منصوبے پر کام جاری ہے۔ دور دراز علاقوں میں مدر اینڈ چائلڈ ہسپتال بنائے جا رہے ہیں۔ شعبہ صحت میں نجی شعبے کی شراکت داری اور سرمایہ کاری کا خیر مقدم کریں گے۔ سرمایہ کار پنجاب میں سرمایہ کاری کے شاندار مواقع سے فائدہ اٹھائیں، ہرممکن سہولتیں دیں گے۔

 

سردار عثمان بزدار کا مزید کہنا تھا کہ سرمایہ کار نئے پاکستان میں وی آئی پی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ ہمارے دروازے سرمایہ کاروں کے لیے کھلے ہیں۔ تبدیل ہوتے پاکستان میں سرمایہ کار سے کوئی رشوت یا کمیشن نہیں لے سکے گا۔ سرمایہ کاری سے متعلقہ فائل سرخ فیتے کی نذر نہیں ہوگی۔ سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کے لیے ہر سطح پر معاونت فراہم کی جائے گی۔

 

واضح ہے کہ اس موقع پر پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب، ترجمان وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر شہباز گل، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن اور سیکرٹری مواصلات و تعمیرات بھی موجود تھے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں